ضابطہ دیوانی میں ترامیم سے متعلق قانونی مسودہ تیار کرلیا گیا

ضابطہ دیوانی میں ترامیم سے متعلق قانونی مسودہ تیار کرلیا گیا

  



پشاور(نیوزرپورٹر)ضابطہ دیوانی میں ترامیم سے متعلق قانونی مسودہ تیار کرلیا گیا جسے جلد صوبائی اسمبلی میں پیش کیے جانے کا امکان ہے جبکہ وزیراعلی خیبرپختونخوا کے ساتھ مذاکرات کے بعد وکلاکیجانب سے ہڑتال بھی فی الفورختم کیے جانے کا امکان ہے، جبکہ خیبرپختونخوابارکونسل نے پشاورہائی کورٹ بارایسوسی ایشن اورصوبہ بھرکے ضلعی بارزکے صدوراورجنرل سیکرٹریز کااجلاس بھی آج طلب کرلیاہے جس میں اہم فیصلے متوقع ہیں ذرائع کے مطابق بارکونسل کے ممبرز نے وزیراعلی خیبرپختونخوا محمود خان سے ملاقات کی ہے جس میں ایڈوکیٹ جنرل شمائل بٹ بھی موجود تھے۔ملاقات میں ضابطہ دیوانی اورمنشیات ایکٹ 2019کے معاملے اوروکلاکیجانب سے ہڑتال پر بات چیت ہوئی، ذرائع کے مطابق وزیراعلی نے وکلاء رہنماؤں کو ضابطہ دیوانی 2019میں ترامیم سے متعلق یقین دہانی کرائی ہے اورکہا ہے کہ وکلاء بھی جاری ہڑتال ختم کر یں۔ذرائع نے بتایا کہ ایڈوکیٹ جنرل اور وکلاتنظیموں کے رہنماؤں کی ضابطہ دیوانی میں نئے ترامیم شامل کرنے پر مشاورت بھی ہوئی ہے اور بتایا گیا کہ دیوانی مقدمات میں نئی ترامیم سے متعلق مسودہ تیارکرکے صوبائی اسمبلی کو بھجوا دیاگیا ہے جس کا اعتراف ایڈوکیٹ جنرل نے گزشتہ روز ہائی کورٹ میں سماعت کے دوران کیا جبکہ ذرائع کے مطابق قانونی مسودہ صوبائی اسمبلی کے جاری سیشن میں پیش کیے جانے کا امکان ہے جس کے بعد وکلا کی جانب سے جاری عدالتی بائیکاٹ بھی فی الفورختم کرنے کا امکان ہے تاہم ذرائع نے بتایا کہ خیبرپختونخوا بارکونسل کا اہم اجلاس آج متوقع ہے جس میں ہڑتال سے متعلق باقاعدہ لائحہ عمل طے کیاجائیگا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...