پارا چنار،مسلسل تین روز سے برفباری،بجلی کا نظام درہم برہم

پارا چنار،مسلسل تین روز سے برفباری،بجلی کا نظام درہم برہم

  



پاراچنار(نمائندہ پاکستان) پاراچنار میں مسلسل تین روز سے برفباری جاری ہے خون جما دینے والی سردی نے معمولات زندگی شدید متاثر کردی ہے،مختلف علاقوں میں بجلی کے کھمبے گرنے سے بجلی منقطع، دور دراز پہاڑی علاقوں کے لوگ گھروں میں محصور ہوگئے، لکڑی کی قیمتیں بڑھنے سے غریب عوام کے شدید مشکلات کا شکارچناروں کی سرزمین پاراچنار میں مسلسل تین روز برفباری کے بعد علاقے نے سفید چادر اوڑھ لی ہے اور علاقے کے حسن میں مزید نکھار آگیا ہے برفباری سے جہاں ایک طرف علاقے کی خوبصورتی میں اضافہ ہوجاتا ہے تو دوسری جانب غریب عوام کے مشکلات میں بڑھ جاتے ہیں مہنگائی کے مارے عوام گھر کا چولہا جلانے اور کمروں کو گرم رکھنے کیلئے فکر مند رہتے ہیں مقامی باشندہ شہزاد مسیح اورسید جواد حسین نے بتایا کہ برفباری کی وجہ سے سردی کی شدت بڑھ گئی ہے مہنگائی بھی بہت ذیادہ ہے اور لکڑی کی قیمت آج کل نو سو روپے فی من کے حساب سے چل رہا ہے جوکہ غریب آدمی کی پہنچ سے بہت دور ہے گھریلو سلنڈر بھی تقریبا دو ہزار سے اوپر ہے بدترین مہنگائی اورشدید ترین سردی کی وجہ سے غریب عوام کے مشکلات میں اور بھی اضافہ ہوگیا ہے، برفباری کے باعث مختلف علاقوں میں بجلی کے کھمبے گرنے سے بجلی مختلف علاقوں کی بجلی منقطع ہوگئی ہے جبکہ دور دراز پہاڑی علاقوں میں برفباری سے آمد و رفت کے راستے بند ہوگئے ہیں اور لوگ گھروں میں محصور ہوگئے ہیں شدید سردی کے باعث علاقے میں بچوں کے امراض بھی بڑھ گئے ہیں اور بچے مختلف موسمی بیماریوں میں مبتلا ہوگئے ہیں اور ہسپتال میں سہولیات کی فقدان کے باعث بیمار بچے اور والدین مشکلات سے دو چار ہیں

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...