وفاقی وزیر فیصل واوڈاٹاک شومیں بوٹ لانے پر مشروط معافی مانگنے کیلئے رضا مند ہوگئے

وفاقی وزیر فیصل واوڈاٹاک شومیں بوٹ لانے پر مشروط معافی مانگنے کیلئے رضا مند ...
وفاقی وزیر فیصل واوڈاٹاک شومیں بوٹ لانے پر مشروط معافی مانگنے کیلئے رضا مند ہوگئے

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی وزیر فیصل واوڈا نے کہاہے کہ مجھے پیمرا کے قوانین کا پتہ نہیں تھا اور میں نے کسی کی تذلیل نہیں کی ،میرا بوٹ لانے کا اقدام غلط تھا یا صحیح تھا ،میں نے ان کا اصل چہرہ قوم کو دکھایا ہے ، نواز شریف اور مریم نواز معافی مانگ لیں تو میں بھی مانگ لوں گا ۔

جیونیوز کے پروگرام ”کیپٹل ٹاک“میں گفتگو کرتے ہوئے فیصل واوڈا نے کہا کہ میں بتا رہا ہوں کہ ن لیگ والے جھوٹے اور فراڈیے ہیں کہ جس طرح ان کی جانب سے مختلف مواقع پر رائے کا اظہار کیاجاتا رہاہے ۔انہوں نے کہا کہ ووٹ کو عزت دینے کا نعرہ دیکر کس نے عوام کوورغلایاہے؟ میں غلطی کروں گا تو سو بار معافی مانگوں گا کیونکہ میر ے والدین نے میری پرورش بہت اچھی کی ہے میں نے بوٹ دکھا کر ان کو اصل چہرہ دکھایا ہے ۔انہوں نے کہا کہ مجھے پیمرا کے قوانین کا پتہ نہیں تھا اور میں نے کسی کی تذلیل نہیں کی ،میرا بوٹ لانے کا اقدام غلط تھا یا صحیح تھا ، میرا پیغام قوم کے لئے تھا اور ان کو میں نے بے نقاب کرنا تھا اور بے نقاب ہوگئے ہیں۔

فیصل واوڈا کا کہنا تھاکہ اگر میں نے عدلیہ یا فوج کی بارے میں کوئی بات کی ہوتی تو میں سڑک پر کھڑے ہوکر سو دفعہ معافی مانگ لیتا ۔ انہوں نے کہاکہ ہم تو چاہتے ہیں کہ ہرکوئی اداروں کی عزت کرے ، اداروں کو متنازعہ نہ بنائے ، ہم تو بہت خوش ہیں کہ نواز شریف اوران کی پارٹی نے ہمارے موقف کی تائید کی ہے ۔انہوں نے کہا کہ نواز شریف اور مریم نواز معافی مانگ لیں تو میں بھی مانگ لوں گا ، مجھے آرٹیکل 19اور پیمرا کی جو پابندیا ں ہیں ان کا نہیں پتہ تھا ،اب مجھے پتہ چل گیا ہے ، آئندہ میں محتاط رہوں گا ۔

مزید : قومی