کورونا وائرس پھیپھڑوں پر کیا اثر ڈالتا ہے؟ صحت یاب ہونے والے مریضوں کے ایکسرے دیکھ کر کسی کو بھی ڈر لگنے لگے

کورونا وائرس پھیپھڑوں پر کیا اثر ڈالتا ہے؟ صحت یاب ہونے والے مریضوں کے ...
کورونا وائرس پھیپھڑوں پر کیا اثر ڈالتا ہے؟ صحت یاب ہونے والے مریضوں کے ایکسرے دیکھ کر کسی کو بھی ڈر لگنے لگے
سورس:   Dr Brittany Bankhead-Kendall

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس مریضوں کے پھیپھڑوں پر کس قدر منفی اثرات مرتب کرتا ہے؟ ایک امریکی ڈاکٹر نے کورونا وائرس کے ایک صحت مند مریض، ایک بلا کے سگریٹ نوش اور ایک صحت مند آدمی کے پھیپھڑوں کے ایکسرے دنیا کو دکھائے ہیں، جن میں کورونا کے صحت مند مریض کے پھیپھڑے دیکھ کر ہی آدمی کو خوف آنے لگے۔ میل آن لائن کے مطابق امریکی ریاست ٹیکساس کی اس ٹراما سرجن ڈاکٹر برٹنی بینک ہیڈ کینڈل نے یہ ایکسرے اپنے ٹوئٹر اکاﺅنٹ پر ایک ٹویٹ میں پوسٹ کیے ہیں اور لکھا ہے کہ ”آج تک ہم نے کسی بھی درجے کے سگریٹ نوش کے پھیپھڑوں کواتنا نقصان پہنچتے نہیں دیکھا جتنا کورونا کے مریضوں کے پھیپھڑوں کو پہنچ رہا ہے۔“

ڈاکٹر برٹنی کے شیئر کیے گئے ایکسریز میں دیکھا جا سکتا ہے ہے کہ کورونا وائرس کے صحت مند مریض کے پھیپھڑے بالکل سفید ہو چکے ہوتے ہیں۔ اس کے برعکس ایک سگریٹ نوش کے پھیپھڑے اس سے قدرے بہتر ہوتے ہیں مگر ان میں بھی سفیدی غالب ہوتی ہے۔ جبکہ صحت مند آدمی کے پھیپھڑوں میں سیاہ حصہ زیادہ ہوتا ہے جس کا مطلب ہے کہ اس کے پھیپھڑے مناسب مقدار میں آکسیجن جسم کو فراہم کر سکتے ہیں۔“ڈاکٹر برٹنی کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس کے مریضوں کے پھیپھڑوں کو پہنچنے والا یہ نقصان اکثر کیسز میں طویل مدتی ہوتا ہے۔ مہینوں پہلے صحت مند ہونے والے مریضوں کواب تک سانس میں دشواری کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔“

مزید :

تعلیم و صحت -کورونا وائرس -