نوازشریف کی وطن واپسی، پاکستانی شہری کی ای میل پر برطانوی دفتر خارجہ کا جواب آگیا

نوازشریف کی وطن واپسی، پاکستانی شہری کی ای میل پر برطانوی دفتر خارجہ کا جواب ...
نوازشریف کی وطن واپسی، پاکستانی شہری کی ای میل پر برطانوی دفتر خارجہ کا جواب آگیا

  

لندن (مجتبیٰ علی شاہ)  پاکستانی شہری کی ای میل پر برطانوی دفتر خارجہ کا جواب  آگیا اور برطانیہ نے  موقف اپنایا کہ  پاکستان میں جاری گرفتاری کے وارنٹ برطانیہ میں قابل قبول نہیں تاہم اگر باضابطہ طورپر پاکستان درخواست کرے تو اس پر برطانوی قوانین کے مطابق غور کیا جائے گا۔ 

یہ بات پاکستان اور افغانستان کیلئے دولت مشترکہ اور ڈیولپمنٹ آفس نے وزیراعظم بورس جانسن کو برطانوی لیبر رکن پارلیمنٹ اسٹیفن ٹمز کے خط کے جواب میں کہی جو انہوں نے پاکستان کی جانب سے لکھا تھا۔ جواب میں کہا گیا ہے کہ یہ معاملہ سابق وزیراعظم اور پاکستانی حکومت کے درمیان ہے۔برطانوی دفتر خارجہ نے بتایا کہ پاکستان ہائی کمیشن لندن کے جاری کردہ ناقابل ضمانت وارنٹ کی کوئی حیثیت نہیں، نواز شریف کا معاملہ، پاکستان اور نواز شریف کے درمیان ہے، برطانیہ مداخلت نہیں کرے گا، ہم نواز شریف کے برطانیہ قیام سے باخبر ہیں اور برطانیہ کے امیگریشن کے قوانین واضح ہیں ۔

حکام کاکہناتھاکہ  ہر مقدمے میں قوانین پر سختی سے عمل کرتے ہیں ،حکومت پاکستان کی طرف سے جاری کئے گئے وارنٹ نواز شریف کے برطانیہ قیام پر اثرانداز نہیں ہو سکتے ،  اور نہ ہی برطانوی پولیس برطانوی عدالت کی اجازت کے بغیر کسی کو گرفتار  کر سکتی ہے ،برطانیہ اور پاکستان کے درمیان ملزمان کے تبادلے یا بے دخلی کا معاہدہ نہیں  تاہم اس کے باوجود بھی بے دخلی کے امکانات موجود ہوتے ہیں،  اگر کسی کو ملک بدر کروانا ہو توا اس کے لئے پراپر چینل استمعال کیا جائے۔

مزید :

Breaking News -قومی -برطانیہ -