پاکستان میں زلزلے، سونامی کا خطرہ، ماہرین موسمیات 

پاکستان میں زلزلے، سونامی کا خطرہ، ماہرین موسمیات 

  

ملتان (سپیشل رپورٹر)ماہرین موسمیات وفلکیات کے مطابق تقریباً 78سال بعد پاکستان میں زلزلہ کے حوالے سے بحیرہ عرب پر واقع سب سے بڑی فالٹ لائن جو مکران کی ساحلی پٹی پر واقع ہے میں اتنی توانائی جمع ہوچکی ہے کہ وہ کسی بھی وقت زلزلہ لاسکتی ہے جو سونامی کا سبب بن سکتا ہے، 6سے8درجے شدت سے زیادہ کا زلزلہ آنے سے 10 سے 15 فٹ بلند لہریں پیدا ہو سکتی ہیں۔ اس زلزلے سے بلوچستان اور کراچی کی ساحلی پٹی کے متاثر ہونے کا خدشہ ہے۔ بتایا گیا ہے کہ قبل ازیں پاکستان بننے سے قبل1944 میں بھی اس فالٹ لائن پر زلزلہ اور پھر سونامی آیا تھا جس کے نتیجے میں چار ہزار اموات ہوئی تھیں۔ یہ فالٹ لائن اب تقریباً 78سال بعد اپنا قدرتی ٹائم اسکیل مکمل کرچکی ہے.جس کے باعث اس بات کی تشویش ہے کہ مذکورہ فالٹ لائن پر دوبارہ زلزلے اور سونامی کی صورتحال پیدا ہو سکتی ہے۔ڈائریکٹر میٹرالوجی صاحب زاد خان کے مطابق فالٹ لائن پر زلزلے اور سونامی کے امکانات کو رد نہیں کیا جاسکتا تاہم اس کی شدت کا انحصار زیر زمین گہرائی پر ہوتا ہے۔لیکن پری شاکس میئرز شروع نہ ہونے تک اس بارے واضع پیشگوئی نہیں کی جاسکتی۔

مزید :

صفحہ اول -