زیر سمندر آتش فشاں پھٹ  گیا، دھماکہ ہزاروں کلومیٹر دور تک سنا گیا، سونامی آگیا

زیر سمندر آتش فشاں پھٹ  گیا، دھماکہ ہزاروں کلومیٹر دور تک سنا گیا، سونامی ...
زیر سمندر آتش فشاں پھٹ  گیا، دھماکہ ہزاروں کلومیٹر دور تک سنا گیا، سونامی آگیا

  

نوکوآلوفا (ڈیلی پاکستان آن لائن) بحرالکاہل میں چھوٹے سے ملک ٹونگا میں زیرِ سمندر آتش فشاں پھٹنے سے سونامی آگیا جس کے باعث نشیبی علاقوں کے لوگوں نے نقل مکانی شروع کردی ہے۔ آتش فشاں پھٹنے سے ہونے والے دھماکے کی آواز ہزاروں کلومیٹر دور تک سنی گئی۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق نیوزی لینڈ کے قریب جزائر پر مشتمل ملک ٹونگا کے دارالحکومت نوکو آلوفا سے 65 کلومیٹر دور سمندر میں آتش فشاں پھٹ گیا جس کی راکھ اور دھواں کئی کلومیٹر تک پھیل گیا۔ دھماکہ اتنا شدید تھا کہ اس کی آواز ہزاروں کلومیٹر دور امریکہ، نیوزی لینڈ ، آسٹریلیا اور فجی سمیت کئی ملکوں میں سنی گئی۔

آتش فشاں پھٹنے سے علاقے میں 7.4شدت کا زلزلہ آیا جس کے بعد سونامی بھی آگیا۔ اب تک چار فٹ سے بھی بلند لہریں ٹونگا کے مختلف جزیروں سے ٹکرا رہی ہیں۔  سوشل میڈیا پر سامنے آنے والی تصاویر اور ویڈیوز میں دیکھا جاسکتا ہے کہ بہت سے علاقوں میں پانی رہائشی علاقوں میں داخل ہوچکا ہے۔

سونامی کے بعد ملک کے بادشاہ کو محفوظ مقام پر منتقل کردیا گیا ہے جب کہ ہزاروں لوگ بھی اونچی جگہوں کی طرف ہجرت کر رہے ہیں۔ بی بی سی کے مطابق  ابھی تک ٹونگا میں کوئی ہلاکت رپورٹ نہیں ہوئی ہے تاہم نکو آلوفا سمیت کئی شہروں میں مواصلاتی نظام درہم برہم ہوچکا ہے۔ سونامی کی وجہ سے بجلی کے کھمبے گرنے سے مکمل بلیک آؤٹ ہے جب کہ کمیونیکیشن کا نظام بھی ناکارہ ہوگیا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -