عرب ریاست میں پاکستانی شہری کی کفیل کا روپ دھار کر غیر ملکی خاتون سے جنسی زیادتی

عرب ریاست میں پاکستانی شہری کی کفیل کا روپ دھار کر غیر ملکی خاتون سے جنسی ...
عرب ریاست میں پاکستانی شہری کی کفیل کا روپ دھار کر غیر ملکی خاتون سے جنسی زیادتی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

دبئی سٹی (مانیٹرنگ ڈیسک) انڈو نیشیائی گھریلو ملازمہ کو کفیل کا روپ دھار کر دھوکے سے اغوا کرنے اور جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے والے پاکستانی ٹیکسی ڈرائیور کو دبئی کی ایک عدالت نے عمر قید کی سزا سنادی ہے۔
اخبار ’’گلف نیوز‘‘ کے مطابق گزشتہ سال اکتوبر میں انڈونیشیا سے دبئی آنے والی 36سالہ گھریلو ملازمہ ایئر پورٹ پر اپنے کفیل کی منتظر تھی کہ 42سالہ پاکستانی ٹیکسی ڈرائیور اس کے پاس پہنچ گیا اور گاڑی میں بیٹھنے کی پیشکش کی۔جب خاتون نے بتایا کہ وہ اپنے کفیل کی منتظر ہے تو ملزم نے خاتون کو بتایا کہ وہی اس کا کفیل ہے اور اسے بٹھا کر روانہ ہو گیا، لیکن ایک ویران جگہ لے جاکر زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ خاتون نے عدالت کو بتایا کہ ملزم نے اسے جنسی تعلق پر مجبور کیا جس سے انکار پر تشدد بھی کیا اور بعد ازاں زیادتی کا نشانہ بھی بنایا۔

مزید پڑھیں:’6 ماہ تک مجھے روز جنسی زیادتی اور تشدد کا نشانہ بنایا جاتا رہا‘
دوسری جانب ملزم نے مؤقف اختیار کیا تھا کہ اس نے خاتون کو رقم ادا کرکے اس کے ساتھ جسمانی تعلق استوار کیا۔ اس کا کہنا تھا کہ ابتدائی طور پر مجبور کرنے کی کوشش کی لیکن جب وہ تیار نہ ہوئی تو رقم کی پیشکش کی، جس کے بعد خاتون کی رضامندی سے اس کے ساتھ جسمانی تعلق استوار کیا۔
اخبار کے مطابق ایک پولیس افسر نے بتایا کہ جب خاتون پولیس کے پاس شکایت کیلئے پہنچی تو اس کے سارے جسم پر زخموں کے نشان تھے جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ اس کے ساتھ زبردستی کی گئی تھی۔ ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ ملزم اعتراف کرچکا تھا کہ اس نے شارجہ انڈسٹریل ایریا میں خاتون کی عصمت دری کی ۔ ملزم عمر قید کی سزا کے خلاف 15روز کے دوران اپیل کرنے کا حق رکھتا ہے۔