پولیس نے دھوکے سے شادی کرنیوالے ملزم کا چالان عدالت میں بھجوادیا

پولیس نے دھوکے سے شادی کرنیوالے ملزم کا چالان عدالت میں بھجوادیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(نامہ نگار )لیاقت آباد پولس نے کنوارہ ظاہرکرکے لڑکی مہناز سے شادی کرنے اور 18روز کے بعد فرار ہونے والے ملزم محمد یونس کے مقدمہ کاچالان سیشن جج کوبھجوا دیا۔سیشن جج لاہور نے چالان کو سماعت کے لئے ایڈیشنل سیشن جج رفاقت علی قمر کی عدالت میں بھجوا دیا ہے ،عدالت میں پیش کیے گے چالان میں مقدمے کی مدعیہ مہناز ہے جس نے لیاقت آباد تھانے میں پرچہ درج کرایا کہ چھ ماہ قبل اس کی ملاقات محمد یونس کے ساتھ ہو گئی محمد یونس روئی کاروبار کرتا تھا اس نے اسے جال میں پھنسا لیا اس کو بہانے سے ایک دوست کے گھر لے گیا جہاں اس کے سات نکاح کرلیا اس کو اپنے گھر لے گیا جہاں اس کے ساتھ اٹھارہ روز رہا بعد میں گاوں سے جلد آنے کا کہہ کر چلا گیا اس کے نہ آنے پر وہ اس کے تعاقت میں گاوں گئی جہاں جا کر معلوم ہوا کہ یونس پہلے سے شادی شدہ ہے اس کے پانچ بچے ہیں وہاں پر اس نے یونس کو ملنے کی کوشش کی لیکن وہ گھر سے بھاگ گیا گھر میں موجود اس کی پہلی بیوی اور بچوں نے اس کو دھمکیاں دیا اور مارنے کی کوشش کی وہ واپس آگئی اس کے ساتھ یونس نے فراڈ کیا ہے اس کے خلاف کارروائی کی جائے پولیس نے مقدمہ درج کرکے یونس کو گرفتار کرلیا۔ عدالت نے چالان آنے پر یونس کو جیل سے آئندہ سماعت پر طلب کرلیا ہے