کراچی تاجر اتحاد کا ود ہولڈنگ ٹیکس کے خلاف 5اگست کو شٹر ڈاؤن کا اعلان

کراچی تاجر اتحاد کا ود ہولڈنگ ٹیکس کے خلاف 5اگست کو شٹر ڈاؤن کا اعلان

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 کراچی (اکنامک رپورٹر)آل کراچی تاجر اتحاد نے بینک ٹرانزیکشن پر ودہولڈنگ ٹیکس کے خلاف بدھ 5اگست2015کو شٹر ڈاؤن کا اعلان کردیا ہے، کراچی کی تاجر برادری آل پاکستان انجمنِ تاجران کے ملک گیر شٹرڈاؤن کی بھرپور حمایت کرتی ہے،شٹرڈاؤن کے باوجود ٹیکس واپس نہ لیا گیا تو تاجر غیرمعینہ مدت کیلئے کاروبار بند کرکے سڑکوں پر آجائینگے اور حکومت سے ہر قسم کا تعاون ختم کردینگے، یہ فیصلہ منگل کوآرام باغ فرنیچر مارکیٹ میں اے کے ٹی آئی کے چیئرمین عتیق میر کی زیرِصدارت تاجروں کی سپریم کونسل کے ایک ہنگامی اجلاس میں کیا گیا جس میں حکومت سے پُرزور مطالبہ کیا گیا کہ غیر منصفانہ ٹیکس کا نفاذ فوری طور پر واپس لیا جائے، ودہولڈنگ ٹیکس کی مد میں کی گئی کٹوتی کھاتے داروں کو واپس کی جائے،ٹیکس نظام کی پیچیدگیاں دور کرکے نان فائلرز کو نیٹ میں واپسی کا موقع دیا جائے، حکومت بینکوں اور تاجروں کا کاروبار تباہ کرنے سے باز رہے، تاجروں کو اشتعال انگیزی اور ٹیکسوں کے بائیکاٹ پر مجبور نہ کرے، عتیق میر نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان دنیا کا واحد ملک ہے جہاں بینکوں کی ٹرانزیکشن پر ٹیکس عائد کیا گیا ہے، بینک کھاتوں سے کٹوتی کھلی ڈکیتی ہے، اس بے سود پریکٹس کے نتیجے میں ایک بھی نان فائلر واپس نیٹ میں نہیں آئیگا، بینک ٹرانزیکشن کی بنیاد پر فائلرز کے کیسز کی بھی جانچ پڑتال ہوگی جس سے وہ بھی نیٹ چھوڑجائینگے، ظلم کی انتہا یہ ہے کہ اس ٹیکس سے بیواؤں، ریٹارڈ اور عام افراد کی رقوم بھی غیر محفوظ ہوجائینگی اور انھیں بھی اپنی جمع شدہ رقوم کی ٹرانزیکشن کا حساب دینا ہوگا، انھوں نے کہا کہ ٹیکس گذاروں کے خدشات دور کیئے بغیر ٹیکس نیٹ وسیع نہیں ہوسکتا، حکومت کی غلط ٹیکس پالیسیاں تاجروں کے خلاف کھلی جنگ ہے، انھوں نے کہا کہ ہر سال ٹیکس نظام میں ایسی شقیں شامل کی گئیں جن کے نتیجے میں 38لاکھ کے ٹیکس نیٹ میں صرف 9لاکھ ٹیکس گذار رہ گئے، ٹیکس گذاروں کے خلاف بے جا تفتیش اور جانچ پڑتال کا دائرہ کار وسیع کیا گیا



، محکمہ ٹیکس کے راشیوں کی یلغار سے تاجر بوکھلاہٹ اور گھبراہٹ کا شکار ہوگئے، انھوں نے کہا کہ محصولات کی وصولی کے تحت جبر زیادتی اور سختی کی پالیسیاں اپنانے سے تاجر برادری موجودہ حکومت کو ٹیکس دینے سے انکار بھی کرسکتی ہے، انھوں نے کہا کہ 5اگست کی شٹرڈاؤن ہڑتال کو شہر کی تمام مرکزی مارکیٹوں کی حمایت حاصل ہے جبکہ ہم قومی و صوبائی اسمبلیوں میں موجود اپوزیشن جماعتوں کو بھی تاجروں کی حمایت کی دعوت دے رہے ہیں، تاجروں کی سپریم کونسل کے ارکان اکرم رانا، انصار بیگ قادری، طارق ممتاز، زبیر علی خان، عبدالغنی اخوند، احمد شمسی، شیخ محمد عالم،سمیع اللہ خان، سید شرافت علی، شاکر فینسی، ملک اسلم جاوید ارائیں، ضیاء عمر سہگل، میر عبدالحئی خان،محمد آصف ، دلشاد بخاری، عبدالقادر، ، سید محمد سعید اور محمد عارف نے اعلان کیا کہ اگر ہڑتال سے قبل بینکوں کی ٹرانزیکشن پر ٹیکس کا فیصلہ واپس نہ لیا گیا تو حکومت کے خلاف کراچی سے خیبر تک جنگ ہوگی۔

مزید :

کامرس -