لیلتہ القدر کے موقع پر شہر میں ناخوشگوار واقعے سے نمٹنے کیلئے سکیورٹی کے سخت انتظامات

لیلتہ القدر کے موقع پر شہر میں ناخوشگوار واقعے سے نمٹنے کیلئے سکیورٹی کے سخت ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(کرائم سیل)لیلتہ القدر کے موقع پر شہر میں ناخوشگوار واقعے سے نمٹنے کیلئے سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ، مساجد ،درباروں ،مزاروں پر پولیس کی بھاری پولیس نفری تعینات کی گئی تھی داتا دربار ،بادشاہی مسجد و دیگر جامع مساجد کی چھتوں پر پولیس اہلکار وں نے ڈیوٹی سرانجام دیں شہر میں تین ہزار سے زائد پولیس افسران اور پولیس اہلکاروں نے ڈیوٹی دی جبکہ پولیس نے داتا دربار ،بادشاہی مسجد کے گردونواح میں سرچ آپریشن کیا پولیس نے سرچ آپریشن کے دوران سات افغان مہاجرین سمیت تیس سے زائد مشکوک افراد کو گرفتار کرکے تفتیش کیلئے مختلف تھانوں میں منتقل کردیا ۔تفصیلات کے مطابق سی سی پی او لاہور امین وینس کی ہدایت پر ممکنہ دہشت گردی کے پیش نظرپولیس نے لیلتہ القدرکی مبارک رات پرسکیورٹی کے سخت انتظامات کئے مختلف مساجد کے باہر چار سے پانچ پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا گیا تھا جبکہ داتا دربار ،اور بادشاہی مسجد پر سی سی ٹی وی کیمرے نصف کئے گئے نمازیوں کی بھی تلاشی لی گئی اور واک تھرو گیٹس نصف کئے گئے تھے ایس پی سکیورٹی کیپٹن (ر)ملک لیاقت و دیگر پولیس افسران رات گئے تک سکیورٹی کا جائزہ لیتے رہے میانی صاحب قبرستان میں واقع دربار اور مزاروں پر بھی پولیس کو سکیورٹی کے حوالے تعینات کیا گیاجبکہ متعلقہ ڈی ایس پیز اور ایس ایچ اوز رات گئے تک اپنے اپنے علاقوں میں گشت کرتے رہے تاہم اس سلسلہ میں ایس پی سکیورٹی ملک لیاقت کا کہنا ہے کہ مبارک رات کے موقع پر عبادت کے دوران مختلف مساجد میں پولیس اہلکاروں کے علاوہ لیڈیز پولیس نے بھی بی بی پاک دامن مزاراور مختلف جگہوں پر ڈیوٹی سرانجام دی جبکہ ڈیوٹی کے دوران غفلت لاپرواہی برتنے والوں کے خلاف بھی سخت محکمانہ کاروائی کی گئی ہے۔

مزید :

علاقائی -