احتساب سے کسی کو بھی بالاترنہیں ہونا چاہئے،لیاقت بلوچ

احتساب سے کسی کو بھی بالاترنہیں ہونا چاہئے،لیاقت بلوچ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(آئی این پی) جماعت اسلامی پاکستان کے قائمقام امیر لیاقت بلوچ نے کیا ہے کہ ملک کی صورتحال ہر پہلو سے پریشان کن ہے ،کرپشن ملک کو چاٹ رہی ہے،نیب نے سپریم کورٹ میں جو فہرست پیش کی ہے اس میں بڑے بڑے نام موجود ہیں،کرپشن میں جس کو پکڑا جاتا ہے ملک کے اندر بھونچال آجاتا ہے،آئین،جمہوریت اور ملک کوخطرہ ہے جیسی آوازیں آناشروع ہو جاتی ہیں،احتساب سے کوئی بھی بالاترنہیں ہونا چاہئے،یہ امت قرآن سے جڑ کر ہی ترقی پاسکتی ہے اور اللہ کا دین قرآن سے منسلک ہونے سے ہی غلبہ پاسکتا ہے،قرآن کا ہم پر حق ہے کہ ہم اسے پڑھیں ،سمجھیں اور اس کا پیغام دنیا تک پھیلانے کی جدوجہد کریں۔انہوں نے ان خیالات کا اظہار جامع مسجد منصورہ میں چالیس روزہ دورہ تفسیر قرآن کریم کی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔تقریب سے سابق نائب امیر چوہدری محمد اسلم سلیمی اور موجودہ نائب امیر حافظ محمد ادریس نے بھی خطاب کیا۔شیخ القرآن و الحدیث مولانا عبدالمالک نے یہ دورہ مکمل کرایا دورہ تفسیر میں ملک بھر سے ڈیڑھ سو طلبا او ر تقریباً چار سو طالبات نے شرکت کی۔لیاقت بلوچ نے خطاب میں کہا کہ اسلام دشمن قوتیں قرآن کریم کے بارے میں کہتی ہیں کہ’’ جب تک قرآن موجود ہے دینامیں امن قائم نہیں ہوسکتا‘‘،دہشت گردی کو منبرو محراب کے ساتھ جوڑا جاتا ہے،اس کے پیچھے ایک خاص قسم کا ماسٹر مائنڈ ہے جو اسلام کے خلاف نفرت پھیلارہا ہے۔انہوں نے کہا کہ انسانیت کے لیے مصنوعی نظام فیل ہوچکے ہیں اسی لیے بڑی تعداد میں لوگ اسلام میں داخل ہو رہے ہیں،قرآ ن پاک اللہ کا نور ہے دنیا کی کوئی طاقت اس کو ختم نہیں کرسکتی۔لیاقت بلوچ نے کہا کہ مسالک اور شدت جذبات کی بنیاد پر مسلمانوں میں تقسیم پیدا ہو چکی ہے، آج اتحاد امت کی شدید ضرورت ہے۔انسانیت کو قرآن و سنت کی بنیادپرمتحد کیا جائے صرف ایک ہی بنیاد ہے جس پر امت متحد ہوسکتی ہے۔

مزید :

صفحہ اول -