تحریک التوائے کار

تحریک التوائے کار

  



لاہور(نمائندہ خصوصی) تحریک انصاف کے رکن پنجاب اسمبلی ڈاکٹر مراد راس نے ایک تحریک التوائے کار پنجاب اسمبلی میں جمع کروا دی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ پنجاب میں ضلعی سطح پر مبینہ طور پر بڑے پیمانے پر گھپلے ہوئے ہیں۔ 36 اضلاع میں 24ارب48کروڑ روپے کی بے ضابطگیاں سامنے آگئیں۔ٹھیکوں میں سیاسی اثرورسوخ بھی استعمال کیا گیا، 214ترقیاتی سکیموں میں مارکیٹ ریٹ سے 24تا 30فیصد مہنگے ٹھیکے دئیے گئے۔ 11ارب روپے کا ڈسٹرکٹ گورنمنٹس نے ریکارڈ ہی فراہم نہ کیا۔ آڈیٹر جنرل آف پاکستان نے 2016۔17کی آڈٹ رپورٹ جاری کر دی۔چیف سیکرٹری پنجاب، سیکرٹری لوکل گورنمنٹ ، وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ کو بھی ایک ایک کاپی بھجوادی گئی۔

تفصیلات کے مطابق آڈیٹر جنرل کی رپورٹ میں پنجاب کے 36 اضلاع میں بڑے پیمانے پرگھپلوں کی نشاندہی کی گئی ہے ، لاہور، قصور، شیخوپورہ، ننکانہ صاحب میں سٹریٹ لائٹس ، سیوریج کی سکیموں میں گھپلے ہوئے ہیں، ٹھیکوں میں مارکیٹ ریٹ سے 30فیصد زائد پیسے دئیے گئے۔سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ لاہور ، شیخوپورہ، ڈی جی خان سمیت 36اضلاع میں فنڈز کا غلط استعمال ہوا۔ 155سکیموں کا کام مکمل کئے بغیرضلعی سطح پر فنڈز دئیے گئے ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 4