روجھان کے کچہ میں چھوٹو کے بعد پٹ گینگ سرگرم،لوگوں کی نقل مکانی

روجھان کے کچہ میں چھوٹو کے بعد پٹ گینگ سرگرم،لوگوں کی نقل مکانی

  



روجھان (نمائندہ پاکستان )روجھان میں چھوٹو گینگ کی گرفتاری کے بعد پٹ گینگ جسکا سربراہ عطااللہ پٹ ہے سرگرم ہوگیا ہے زرائع نے بتایا ہے کہ روجھان کے کچے میں رہائشی افراد کو(بقیہ نمبر15صفحہ12پر )

بھتہ دینے کا مطالبہ کیا جارہا ہے اور بھتہ نہ دینے کی صورت میں جرائم پیشہ گروپوں کی طرف سے کچے کے رہائشی وڈیرہ ،زمیندار اور مقامی افراد کو اغواء اور قتل کی دھمکیاں دی جارہی ہے جس کے باعث روجھان کے کچے کے رہائشی کچہ مندری اور دیگر علاقے چھوڑ کر محفوظ جگہ پر نقل مکانی کررہے ہیں جبکہ زرائع نے بتایا ہے کہ روجھان کے کچے میں روپوش جرائم پیشہ گروپوں نے پولیس سے مقابلہ کرنے کے لیے دوسرے علاقوں سے بھی اپنے جرائم پیشہ ساتھی روجھان کے کچے میں بلا لیا ہے روجھان کے کچے ۲۶ گھنٹے کی فائرنگ کے دوران ایس ایچ او سمیت دو افراد کو قتل اور تین پولیس اہلکار کو زخمی کرکے پو لیس اور مقامی افراد کا گھیرا توڑ کرکر فرار ہوجانے سے جرائم پیشہ گروپوں کے حوصلے بلند ہوگئے ہیں زرائع نے بتایا ہے کہ جرائم پیشہ گروپوں کے پاس ہینڈ گرینڈ ،راکٹ لانچر جیسے جدید اسلحہ موجود ہے جبکہ پنجاب حکومت کے پنجاب پولیس کو جدید اسلحہ اور لڑنے کے جدید آلات دینے کے صرف تمام دعوے نکلے جرائم پیشہ گروپوں کے پاس ناصرف جدید اسلحہ ہے بلکہ مضبوط سہولت کاروں کا نیٹ ورک بھی ہے جو ہر مشکل میں انکو بچانے کااختیار رکھتے ہیں عوامی وسماجی حلقوں سابق ناظم سردار اطہر علی خان مزاری ،پیپلز پارٹی کے تحصیل جنرل معراج خان مزاری ،گل نواز ،لقمان سمیت سینکڑوں افراد نے مطالبہ کیا ہے کہ اگر روجھان کے کچے میں قانونی رٹ قائم رکھنی ہے تو روجھان کے کچے میں جرائم پیشہ گروپوں کے خلاف آرمی آپریشن کرکے مسقتل رینجرز کی چوکیاں بنائی جائے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...