قومی اسمبلی کے اجلاس کیلئے ریکوزیشن پر98 ارکان کے دستخط

قومی اسمبلی کے اجلاس کیلئے ریکوزیشن پر98 ارکان کے دستخط

  



اسلام آباد(آئی این پی)متحدہ حزب اختلاف نے قومی اسمبلی اجلاس کیلئے 98 اراکین کے دستخطوں سے ریکوزیشن تیار کر لی ‘ ریکوزیشن جمع کرانے کا اختیار اپوزیشن لیڈر سید خورشید شاہ کو دے دیا گیا ‘ دونوں بڑی اپوزیشن جماعتوں سمیت 9 جماعتوں کے اراکین نے ریکوزیشن پر دستخط کر دئیے ہیں‘ریکوزیشن جمع کرانے کے سلسلے میں تاخیر سے کام لیا جا رہا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق اپوزیشن جماعتوں نے وزیر اعظم نواز شریف پر استعفیٰ کا دباؤ ڈالنے کے لئے پارلیمنٹ میں دمام دم مست قلندر کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ سینٹ کا اجلاس ریکوزیشن پر طلب کر لیا گیا ہے جبکہ قومی اسمبلی کے اجلاس کے لئے جمعہ کو ریکوزیشن تیار کر لی گئی ہے ریکوزیشن کیلئے 86 اراکین درکار ہوتے ہیں تاہم اپوزیشن کے 98 ارکان نے ریکوزیشن پر دستخط کر دئیے ہیں۔ متحدہ اپوزیشن نے ریکوزیشن جمع کروانے کا آختیار اپوزیشن لیڈر کو دیدیا ہے۔ یاد رہے کہ ریکوزیشن جمع کرو انے کے حوالے سے اپوزیشن پہلے ہی تاخیر کر چکی ہے کیونکہ 31 جولائی کو قومی اسمبلی کا اجلاس پہلے سے طے ہے جس میں 15 دن رہ گئے ہیں جبکہ ریکوزیشن پر سپیکر 15 دنوں میں اجلاس طلب کرنے کے پابند ہیں جو تاحال جمع بھی نہ ہو سکی ہے۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...