صوبائی حکومت کو اپنی تمام توجہ متاثرین کی فوری داد رسی پر مرکوز کرنی چاہئے :حیدر ہوتی

صوبائی حکومت کو اپنی تمام توجہ متاثرین کی فوری داد رسی پر مرکوز کرنی چاہئے ...

  



مٹہ ( نما ئندہ پاکستان ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی نے کہا ہے کہ وزیر اعظم نوازشریف کو امین اور صادق کہنا یا نہ کہنا یہ میرا اور عمران خان کے کام نہیں بلکے اس کیلئے سپریم کورٹ موجود ہے اور سپریم کورٹ اس بارے میں جو فیصلہ کرتے ہیں وہ تمام پارٹیوں اور عوام کو قابل قبول ہوگی جی ائی ٹی کے پاس فیصلے کی اختیار نہیں کیونکہ یہ جی ائی ٹی تو سپریم کورٹ نے بنایا تھا بات یہ نہیں کہ کسی کے حق یا کسی کے خلاف فیصلہ ہوتا ہے بات یہ ہے کہ ہم کو عدالتوں کے فیصلے مانا چایئے صرف اپنے مرضی کی فیصلوں کو مانا اور دوسرے کی حق میں فیصلے کو نہ مانا یہ بات غور کی ہے عمران خان ایک طرف عدالتوں پر خوب باتیں کرتے ہیں جبکہ دوسرے طرف عدالتوں کی احترام میں بھی کوئی کسر نہیں چھوڑتے موجودہ صوبائی حکومت کے تاریخی ناکام پالیسی کی وجہ سے پی ٹی ائی ائندہ الیکشن میں صوبے سمیت پورے ملک میں شکست کھائیں گے سیاسی قائدین کو ملک میں جاری بحران کو کم اور ختم کرنے میں اپنا کردار ادا کریں اگر اے این پی کیساتھ کسی کی ہاتھوں 2013والی صورتحال نہ ہوئی تو صوبے میں کلین سویپ کرینگے اے این پی چاہتے ہیں کہ موجودہ حکومت اپنا وقت پورا کریں لیکن اگر وقت سے پہلے الیکشن ہوجاتے ہیں تو اے این پی الیکشن کیلئے تیار ہے اور یہی وجہ ہے کہ ہم نے یکم اگست سے 30اگست تک پارٹی امیدواروں کی ٹکٹوں کیلئے درخواستیں طلب کی ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز مٹہ برہ درشخیلہ میں اپنے ایک خصوصی انٹرویوں میں بات چیت کرتے ہوئے کیا اس موقع پارٹی کے دیگر صوبائی اور مقامی قائدین بھی موجود تھے انہوں نے کہا کہ پانامہ تحقیقات ضروری ہے لیکن ایک شخص کی خلاف کی نہی بلکے جتنے نام پانامہ لیکس میں موجود ہے ان سب کی خلاف کاروائی ہونے چایئے انہوں نے کہا کہ پانامہ لیکس سے اس وقت ملک کودرپیش اور خصوصاً پختونخوا میں عوام کی اہم ایشوں توجوں سے محروم ہوچکی ہے جس میں فاٹا مستقبل سی پیک منصوبے میں صوبے کی حصہ این ایف سی ایوارڈ امن امان اور دیگر اہم مسلے شامل ہے انہوں نے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت کی ناقص کارکردگی کی وجہ سے صوبے کی چار سالوں کو ضائع کی گئی اور سرکاری محکموں کی ایسی حال کی گئی ہے جو عوام کی سامنے ہے انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت اور سوات کے ممبران اسمبلی اور وزراء اور مشیروں کی سوات کی عوام اور علاقے کی ترقی میں کوئی دلچسپی نہیں جس کا زندہ ثبوت حالیہ صوبائی بجٹ میں سوات کہ ہسپتالوں اور دیگر ترقیاتی کاموں میں سوات کا حصہ ہے انہوں نے کہا کہ تعلیمی ایمرجنسی کی بلند وبالاء دعوے کرنے والوں کی کارکردگی صوبے میں سرکاری سکولوں کی نتیجوں سے عوام کی سامنے اچکی ہے اور پولیس اصلاحات اور پولیس کو سیاست سے ازاد کرنے کی مثال بھی عوام نے بریم چیک پوسٹ پر پولیس کیساتھ ایک صوبائی وزیر کے مہمانوں کی ہاتھوں اور پولیس افسران کے سیاسی دباو میں اکر لوگوں نے دیکھ لیا ہے انہوں نے کہا موجودہ حکومت نے سوات میں ایک بھی اپنا منصوبہ شروع نہیں کیا ہے اور اج تک وزیر اعلیٰ اور انکے نمائندے اے این پی حکومت میں منظور شدہ سکمیوں پر اپنے تختیاں لگاتے ہیں کیونکہ صوبائی حکومت کی پاس تو فنڈز نہیں صوبائی حکومت اس وقت بیرونی قرضوں پر چلتے ہیں کیونکہ صوبائی فنڈز تو دھرنوں اور بنی گالہ کی خرچ میں ختم ہوچکا ہے انہوں نے کہا کہ جس حکومت کے وزیر اعلیٰ اور انکے وزیر کسی شہید کے نمازجنازہ کیلئے نہیں جاتے سکتے وہ صوبے کی عوام کی کس طرح خیر خواہ ہوسکتی ہے

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی اور جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے صوبہ بھر میں ہونے والی حالیہ بارشوں کے نتیجے میں ہونے والے قیمتی جانی نقصان پر دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے جاں بحق افراد کیلئے تعزیت کا اظہار کیا ہے،اپنے ایک بیان میں پارٹی رہنماؤں نے کہاکہ قدرتی آفات کی وجہ سے قومی و ذاتی املاک کو نقصان پہنچنا افسوس ناک ہے۔تاہم صوبائی حکومت کو اپنی تمام توجہ متاثرین کو فوری امداد بہم پہنچانے کیلئے مرکوز کرنی چاہئے ، انہوں نے کہا کہ حالیہ بارشوں کی وجہ سے ذاتی املاک کو بھی نقصان پہنچا ہے دکھ کی اس گھڑی میں سب کو متاثرین کی داد رسی کرنی چاہئے اور جس حد تک ممکن ہو سکے ان کی امداد کی جائے ،انہوں نے کہا کہ کوئی بھی دوسری چیز انسانی جانوں کا نعم البدل نہیں ہو سکتی تاہم انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ جاں بحق ہونے والوں کے لواحقین کی فوری طور پر مالی امداد کی جائے ،اور زخمیوں کو بہترین طبی سہولیات کی فراہمی کیلئے مؤثر اقدامات کئے جائیں ، انہوں نے کہا کہ مصیبت کی اس گھڑی میں سب کی ذمہ داری ہے کہ وہ اپنے متاثرہ بہن بھائیوں کی امداد کیلئے عملی اقدامات اٹھائیں ،سردار حسین بابک نے صوبائی حکومت سے نقصانات کا فوری طور پر جائزہ لینے ، تخمینہ لگانے اور متاثرین کے ساتھ فوری امداد کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ صوبائی حکومت کو حالیہ بارشوں کی وجہ سے ممکنہ سیلاب کی صورتحال کیلئے الرٹ رہنا چاہئے اور تمام تر توجہ ممکنہ حادثات سے نمٹنے پر مرکوز رکھنی چاہئے، انہوں نے کہا کہ عوامی نیشنل پارٹی متاثرین کے دکھ اور تکلیف میں برابر کی شریک ہے اور پارٹی کسی طور متاثرین کو تنہا نہیں چھوڑے گی،انہوں نے کہا کہ مختلف ہسپتالوں میں زیر علاج زخمیوں کو بہتر طبی سہولیات کی فراہمی بھی یقینی بنائی جائے۔

مزید : کراچی صفحہ اول