لڑکی اغوا میں مدد کا شک، دیرینہ دشمنی، 2افراد قتل، بچے خاتون سمیت 7حادثات کا شکار

لڑکی اغوا میں مدد کا شک، دیرینہ دشمنی، 2افراد قتل، بچے خاتون سمیت 7حادثات کا ...

  



ملتان،کرم پور،کوٹ ادو،مٹھن کوٹ،راجن پور،رحیم یار خان(وقائع نگار،نمائندگان)لڑکی اغوا میں مدد کے شبہ میں محنت کش کو موت کے گھاٹ اتار دیا دیرینہ دشمنی پر مخالفین نے فائرنگ کرکے پولیس اہلکار کو قتل کردیا مختلف حادثات میں 2سالہ بچے،خاتون سمیت 7 افراد دم توڑ گئے اس سلسلے میں ملتان سے وقائع نگار کے مطابق کینٹ جھیل کے قریب دو موٹر سائیکل آپس میں ٹکرا گئے۔جس کے نتیجے میں موٹر سائیکل پر سوار ایک خاتون موقع پر جاں بحق ہوگئی جبکہ دو افراد معمولی زخمی ہوئے ہیں واضع رہے خاتون کی شناخت40سالہ نازنین شگفتہ کے نام سے ہوئی ہے مقامی پولیس نے موقع پر پہنچ کر ابتدائی معلومات اکٹھی کی اور ضروری قانونی کارروائی کی ہے۔کرم پور سے نمائندہ پاکستان کے مطابق کرم پور کے نزدیکی موضع دین واہ کا محمد اعجاز کا بچہ شعیب عمر 2سال نہر کے کنارے پر کھیلتے ہوئے نہر میں گرگیا جس پر اہل علاقہ اور ریسکیو ٹیم نے ایک گھنٹہ کی کوشش سے بچہ کی نعش نہر سے نکال لی ۔کوٹ ادو سے تحصیل رپورٹر کے مطابق تھانہ محمود کے علاقہ قصبہ گجرات کی بستی بلوچ آباد کے رہائشی طالب حسین گوپانگ نے وزیرستان کے رہائشی محمد علی پٹھان کی جواں سالہ بیٹی کو اغواء کرکے اس کے ساتھ شادی کر لی تھی ،محمد علی پٹھان کو شبہ تھا کہ نور محمد سومرا نے اغواء میں طالب حسین کی مدد کی تھی،نور محمد جس نے اپنے گھر میں کریانہ کی چھوٹی سے دوکان بنائی ہوئی تھی میں طالب حسین گوپانگ کے ساتھ موجود تھا کہ اسی اثناء میں محمد علی پٹھان اپنے دیگر ساتھیوں سلیم پٹھان اور کبیر پٹھان کے ہمراہ مسلح آتشیں اسلحہ آگیا اور پسٹل کے فائر طالب اور نور محمد پر کئے جو کہ طالب حسین پر خطا ہو گئے جبکہ نور محمد کو سیدھے فائر لگنے سے وہ موقع پر جاں بحق ہو گیا،پولیس محمود کو نے مقتول نور محمد کی بیوی زینب مائی کی مدعیت میں مقدمہ نمبر275/17زیر دفعہ302-109-34درج کرکے قاتلوں کی تلاش شروع کر دی ہے۔مٹھن کوٹ،راجن پور سے نامہ نگار،ڈسٹرکٹ رپورٹر کے مطابق نواحی علاقہ بستی پھلی میں دیرینہ دشمنی کی بنا پر مخالفین نے پولیس اہلکار کو فائرنگ کر کے کو قتل کر ڈالا بتایا گیا ہے کہ نواحی علاقہ بستی پھلی میں نوجوان نذر دریشک مسجد سے نماز جمعہ ادا کرکے جیسے ہی باہر نکلا 3موٹر سائیکلوں پر سوار 9 ملزمان بشیر وغیرہ نے فائرنگ کرکے اسے قتل کردیا مقتول محکمہ پولیس میں وائرلیس آپریٹر تھا پولیس نے نعش کو قبضہ میں لے کرپوسٹ مارٹم کے لئے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال بھجوا دیا ہے اور ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرکے مزید تفتیش شروع کردی ہے مقتول کے بھائی فدا حسین نے عرصہ 2سال قبل گرانی خاندان کے ایک نوجوان کو قتل کیا تھا جس کے مقدمے میں وہ جیل میں تھا اور وہاں پر اس نے مبینہ طور پرخودکشی کرکے اپنی جان دے دی تھی گرانی خاندان نے اس دشمنی کی بنا پر نذر حسین دریشک کو قتل کیا ہے ۔رحیم یار خان سے بیورو نیوز کے مطابق کوٹ سبزل کا رہائشی 16سالہ شاہ زیب علی آیا جو اپنی موٹرسائیکل پر 34سالہ چچی شبیراں بی بی اور اس کی بیٹی دو سالہ کمسن حمیرا بی بی اورپھپھو چالیس سالہ انور مائی کے ہمراہ سوار ہوکر بدلی شریف جارہے تھے کہ مسلم چوک کے نزدیک قومی شاہراہ پر پیچھے سے آنے والے تیز رفتار آئل ٹینکر نے کراسنگ کے دوران سائیڈ مار کر سڑک پر گرادیا۔ آئل ٹینکر کے نیچے آکر دو سالہ کمسن حمیرا بی بی ،والدہ شبیراں بی بی اور نوجوان شاہ زیب موقع پر ہی زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئے جبکہ انور مائی کو طبی امداد کے لئے ہسپتال منتقل کردیا۔ دوسرا حادثہ تھلی چوک کے نزدیک کے پیش آیا جہاں 50سالہ نامعلوم شخص سڑک کنارے پیدل جارہاتھا کہ پیچھے سے آنیوالی تیز رفتار کار نے بے قابو ہوکر ٹکر ماردی جس کے نتیجہ میں نامعلوم شخص شدید زخمی ہوگیاجبکہ تیسرا حادثہ سہجہ کے رہائشی 30 سالہ عبدالغفور کے ساتھ پیش آیا جو اپنی موٹرسائیکل پرسوار ہوکر کام کے سلسلے میں جارہا تھا کہ گڑھی موڑ کے نزدیک سامنے سے آنیوالے تیز رفتار موٹرسائیکل سوارنے بے قابوہوکر ٹکر ماردی جس کے نتیجہ میں عبدالغفور شدید زخمی ہوگیا۔ زخمی ہونے والے نامعلوم شخص اور عبدالغفور کو طبی امداد کے لئے شیخ زید ہسپتال منتقل کیاجہاں طبی امداد کے باوجود نامعلوم شخص اور عبدالغفور زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑگئے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...