تحریک انصاف نے شریف خاندان کی جے آئی ٹی میں پیشیوں پر اخراجات کی تفصیلات مانگ لیں

تحریک انصاف نے شریف خاندان کی جے آئی ٹی میں پیشیوں پر اخراجات کی تفصیلات ...

  



لاہور(آئی این پی) تحریک انصاف کا وزیر اعظم نے وزیراعظم میاں محمد نوازشریف کو خط لکھ کرجے آئی ٹی میں پیشیوں کے وقت پروٹوکول اور ذاتی بیرونی دوروں پر اٹھنے والے اخراجات کی تفصیلات مانگ لیں۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کی سینئر رہنما عندلیب عباس نے وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کو خط لکھا ہے۔ خط میں جے آئی ٹی میں پیشیوں کے وقت شریف خاندان کے پروٹوکول اور ذاتی بیرونی دوروں پر اٹھنے والے اخراجات کی تفصیلات طلب کی گئی ہیں۔خط کے مطابق جے آئی ٹی میں پیشی کے وقت وزیراعظم اور ان کی صاحبزادی کے پروٹوکول پر بالترتیب تین اعشاریہ آٹھ تین ا ور دو اعشاریہ پانچ چھ ملین روپے کی کثیر رقم خرچ ہوئی حالانکہ شریف خاندان کے تمام افراد جے آئی ٹی میں ذاتی نوعیت کی بنیاد پر پیش ہوئے تھے۔ خط میں پوچھا گیا ہے کہ پی آئی ڈی جو کہ ایک خالصتا قومی اور سرکاری ادارہ ہے اس کو حکومتی وزرا ء کس بنیاد پر شریف خاندان کے ذاتی دفاع کیلئے استعمال کرتے ہیں؟ وزیر اعظم سے پاناما کیس میں ان کے وکلا کو دی جانے والی فیسوں کی تفصیلات 17فروری کے خط میں مانگی گئی تھیں جس کا جواب اب تک نہیں دیا گیا۔ وزیر اعظم کی طرف سے جواب نہ آنے کا واضح مطلب یہ ہے کہ ان کے وکلا کو قومی خزانے سے فیسیں ادا کر کے قومی خزانے پر ناجائز اور غیر قانونی بوجھ ڈالا گیا خط میں مزید کہا گیا ہے کہ2013ء سے اب تک17 بار انگلستان جا کر وزیر اعظم نے بیرونی دوروں کے تمام سابقہ ریکارڈ توڑ ڈالے۔ وزیر اعظم نے تین سال میں اس سے بھی زیادہ بیرونی دورے کیے جتنی بار اوباما نے اپنے پوری مدت میں کیے۔ ان تمام دوروں کے اخراجات کی تفصیلات بتائی جائیں۔ اگر ان اخراجات کا کوئی قانونی ثبوت نہیں ہے تو سپریم کورٹ کو قومی خزانے کی حفاظت کیلئے ازخود نوٹس لینا چاہیے۔ عندلیب عباس کی جانب سے ان تمام سولالات کے جواب 21یوم کے اندر فراہم کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...