مودی حکومت کے ساتھ مقبوضہ وادی کی کٹھ پتلی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی بھی ہوش و حواس کھو بیٹھی ،تحریک آزادی میں پاکستان کے ساتھ چین کو بھی ملوث کر دیا

مودی حکومت کے ساتھ مقبوضہ وادی کی کٹھ پتلی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی بھی ہوش و ...
مودی حکومت کے ساتھ مقبوضہ وادی کی کٹھ پتلی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی بھی ہوش و حواس کھو بیٹھی ،تحریک آزادی میں پاکستان کے ساتھ چین کو بھی ملوث کر دیا

  



نئی دہلی (ڈیلی پاکستان آن لائن)مقبوضہ کشمیر میں تحریک آزادی کی بڑھتی ہوئی تحریک اور حریت پسند قائدین کے ساتھ کشمیریوں کی جہد مسلسل نے مودی سرکار اور ہندوستانی فوج کو بوکھلا دیا ہے ،بھارتی سرکار کشمیریوں کی تحریک آزادی کے پیچھے پاکستانی ہاتھ اور مسلح جدوجہد میں پاک فوج پر مسلسل الزام تراشی کرتی رہی ہے اور اب بھی کر رہی ہے لیکن برہان وانی کی شہادت کے بعد تحریک آزادی ایک نئے موڑ میں داخل ہوئی تو جموں و کشمیر کی کٹھ پتلی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی بھی ہوش حواس کھو بیٹھی ہے ،محبوبہ مفتی نے نریندرا مودی سے بھی دو ہاتھ آگے بڑھتے ہوئے کشمیر میں لڑی جانے والی جنگ آزادی میں اپنی شکست تسلیم کرتے ہوئے پاکستان کے ساتھ چین کو بھی ملوث کر دیا ہے،انہوں نے بے بنیاد الزام عائد کیا ہے کہ کشمیر میں قانون و انتظام کا مسئلہ نہیں ہے بلکہ ہم غیر ملکی طاقتوں سے جنگ لڑ رہے ہیں جس میں چین نے بھی ہاتھ ڈال دیا ہے۔

بھارتی نجی چینل ’’انڈیا ٹی وی‘‘ کے مطابق جموں و کشمیر کی کٹھ پتلی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے ہندوستانی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ سے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھاکہ کشمیر میں قانون و انتظام کا مسئلہ نہیں ہے بلکہ ہم غیر ملکی طاقتوں سے جنگ لڑ رہے ہیں جس میں چین نے بھی ہاتھ ڈال دیا ہے، ریاستی حکومت قانون و انتظام کی لڑائی نہیں لڑ رہی ،وادی میں جو لڑائی ہورہی ہے ، اس میں باہر کی طاقتیں شامل ہیں اور اب تو چین نے بھی درمیان میں آکر ہاتھ ڈالنا شروع کردیا ہے۔انہوں نے کہا کہ جب تک پورا ملک، سیاسی جماعتیں ساتھ نہیں دیتیں تب تک یہ جنگ نہیں جیت سکتے، مجھے خوشی ہے کہ سیاسی جماعتیں متحد ہوگئی ہیں اور کشمیر کے مسئلہ کا کھل کر ایک ساتھ مقابلہ کررہی ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں جموں و کشمیر میں دفعہ 370کا مکمل دفاع کرتے ہوئے محبوبہ مفتی نے کہا کہ جب جی ایس ٹی ہم نے منظور کیا تب صدر نے زور دیا تھا کہ دفعہ 370کا خاص خیال رکھا جائے،دفعہ 370ہمارے جذبات کے ساتھ وابستہ ہے۔ واضح رہے کہ محبوبہ مفتی کی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ سے ایسے وقت میں ملاقات ہوئی ہے جب مودی حکومت اپوزیشن لیڈروں کو بلا کر انہیں چین کے ساتھ سکم سرحد پر جاری کشیدگی اور امرناتھ یاتریوں پر حملہ کے سلسلے میں پوری صورت حال سے آگاہ کرارہی ہے۔

مزید : بین الاقوامی /اہم خبریں


loading...