بھارتی اپوزیشن جماعتیں جمہوریت بچانے کے لئے مسلمانوں کے خلاف تشدد کے بڑھتے ہوئے واقعات کے خلاف پارلیمنٹ میں آواز بلند کریں:شبنم ہاشمی

بھارتی اپوزیشن جماعتیں جمہوریت بچانے کے لئے مسلمانوں کے خلاف تشدد کے بڑھتے ...
بھارتی اپوزیشن جماعتیں جمہوریت بچانے کے لئے مسلمانوں کے خلاف تشدد کے بڑھتے ہوئے واقعات کے خلاف پارلیمنٹ میں آواز بلند کریں:شبنم ہاشمی

  



نئی دہلی(ڈیلی پاکستان آن لائن)بھارت میں مسلمانوں پر ہونے والے مسلسل پر تشدد واقعات میں ہونے والے خطرناک اضافے کے خلاف پورے ہندوستان میں کئی جماعتیں سراپا احتجاج ہیں جبکہ اقلیتوں پر ہونے والے انتہا پسند ہندؤں کے حملوں پر انسانی حقوق کی تنظیموں نے بھی بھر پور آواز بلند کی ہے،انڈیا میں انسانی حقوق کی مشہور سماجی رہنما شبنم ہاشمی نے بھی مسلمانوں کے خلاف پر تشدد واقعات کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ آج کہا کہ ملک میں پیدا ہو رہے ڈر اور خوف کے ماحول کے خلاف اپوزیشن پارٹیوں کو پارلیمنٹ کے آئندہ اجلاس میں آواز بلند کرنی چاہئے،ہندوستان میں کئی طرح سے خوف کا ماحول پیدا کیا یا جا رہا ہے،کبھی گائے کے گوشت کے نام پر تو کبھی کسی اور بہانے سے لوگوں کو ہراساں کیا جا رہا ہے،انڈیا میں ایک غیر اعلانیہ ایجنڈا چل رہا ہے جس میں اختلاف رائے کو ختم کیا جا رہا ہے۔

بھارتی نجی چینل ’’انڈیا ٹی وی ‘‘ کے مطابق ہندوستان میں انسانی حقوق کی معروف سماجی رہنما شبنم ہاشمی نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مسلمانوں کے خلاف تشدد کے بڑھتے ہوئے واقعات کے خلاف اپوزیشن جماعتوں کو پارلیمنٹ کے آئندہ اجلاس میں اس کی مخالفت میں آوازبلند کرنی چاہئے، یہ جمہوریت بچانے کے لئے ضروری ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارت میں مختلف طرح سے خوف و ہراس کا ماحول پیدا کیا جا رہا ہے،یہ ہندستانی جمہوریت اور ثقافت کے لئے بڑا خطرہ ہے،پولیس کے ذریعے بھی لوگوں کو جعلی ان کاؤنٹر میں مارنے کی دھمکیاں دے کر خوف و ہراس پھیلایا جا رہا ہے ،میں نے وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ کو بھی ایک خط لکھا ہے ،جس میں ساری صورتحال کا تفصیلی ذکر کیا ہے ۔

مزید : بین الاقوامی


loading...