پنڈی بھٹیاں: پی پی 71 کی انتخابی سیاست میں تبدیلی آثار نمایاں

پنڈی بھٹیاں: پی پی 71 کی انتخابی سیاست میں تبدیلی آثار نمایاں

پنڈی بھٹیاں (نامہ نگار) پی پی 71کی انتخا بی سیا ست میں تبد یلی کے آثا ر نظر آ نا شروع ہو گئے اورگزشتہ نصف صدی کے بر عکس اس مر تبہ دو دھڑوں کی بجا ئے نئی سیا ست نے جنم لے لیا ہے جس کا سہر ا میدان سیا ست میں ایک نئے اضا فے سا بق ایس ایس پی رائے ضمیر الحق کھرل کے سر ہے جنہوں نے گزشتہ دو سال سے علاقہ کے عوام کی کر کے سیا ست کا رخ بدلا ہے اس سے قبل اس حلقہ میں دو ہی دھڑ ے جن میں پنڈی بھٹیاں کا بھٹی خا ندان اور ان کا مخالف سیا سی گروپ میدان سیا ست میں اتر تا تھا اور دو نوں گروپ اپنے اپنے دھڑوں کی سیا ست کر کے آ سان طر یقہ سے طر یقہ سے ووٹ حا صل کر لیتے تھے جبکہ عام ووٹر کو کو ئی پو چھتا ہی نہ تھا را ئے ضمیرالحق نے پسے ہو ئے طبقہ اور عام آدمی سے محبت اور خدمت کی سیا ست بنیاد رکھ کر روائتی سیا ست دا نوں کو پر یشا نی میں مبتلا کر دیا ہے جس سے اب انہیں گھر گھر جا کر ووٹروں کی منتیں کر نا پڑ رہی ہیں۔ اس حلقہ سے اب چار امید وار اپنی بھر پور انتخا بی مہم چلا تے نظر آ رہے ہیں جن میں پی ٹی آ ئی کے امید وار بھٹی خا ندان کے چشم و چر ا غ احسن انصر بھٹی ن لیگ کے امید وار پنڈی بھٹیاں کے آ رائیں فیملی سے تعلق رکھنے والے شعیب شفیق آرائیں خرم چو ریڑہ کی سادات فیملی کے سربراہ شعیب شا ہ نواز جو کہ تحریک لبیک کے نشا ن پراور رائے ضمیر الحق کھرل کے بیٹے شا ہد عباس کھر ل ایڈووکیٹ شا مل ہیں۔پیپلز پارٹی کے امید وار ڈاکٹر معراج دین اور دیگر امیدوار بھی انتخاب لڑ رہے ہیں جو چار امید وار انتخا بی دوڑ میں آ گے نظر آرہے ہیں ان میں رائے عبا س کھرل ہی واحد امید وار ہیں جن کو نہ تو کسی سیا سی پارٹی کی چھتری اور نہ ہی لو کل سا بقہ روائتی سیا ستدانوں کی سر پر ستی حاصل ہے ان کو اپنے با پ کی دو سالہ خدمت اور غریب اور عام آدمی کی محبت نے سیا سی دوڑ میں شا مل کیا ہے۔

مزید : علاقائی