سپورٹس راؤنڈاپ

سپورٹس راؤنڈاپ

پُرعزم باکسر محمد وسیم ورلڈ ٹائٹل کے لئے آج رنگ میں اتریں گے

پاکستانی باکسر محمد وسیم ورلڈ ٹائٹل حاصل کرنے کے لئے پرعزم ہیں جس کے لئے انہوں نے تیاری شروع کردی۔ پاکستانی باکسر نے ملائشیا سے ویڈیو پیغام جاری کیا جس میں وہ ورلڈ ٹائٹل حاصل کرنے کے لئے پرجوش نظر آئے۔ محمد وسیم کا کہنا تھاآج ہونے والے مقابلے کے لئے بالکل تیار ہوں۔ان کا کہنا تھا کہ امید ہے ٹائٹل جیت کر پاکستان لاوں گا، قوم میری جیت کے لئے دعا کرے۔ ملائشیا کے شہر کوالالمپور میں عالمی مقابلے کا انعقاد کیا جارہا ہے جس میں پاکستانی باکسر محمد وسیم کا فلائی ویٹ کیٹگری میں جنوبی افریقہ کے باکسر موروثی متھالین سے مقابلہ ہوگا۔پاکستانی باکسر محمد وسیم 8انٹرنیشنل ناقابلِ شکست فائٹ کرچکے جبکہ افریقہ کے موروثی متھالین اب تک کے کیرئیر میں 37 مقابلے کرچکے جن میں سے انہوں نے 35میں فتح حاصل کی ۔محمد وسیم گزشتہ برس ڈبلیو بی سی رینکنگ میں فلائی ویٹ کیٹگری کے نمبر ون باکسر قرار پائے تھے۔ باکسر محمد وسیم نے 8پروفیشنلز فائٹ کھیلیں اور سب مقابلوں میں کامیابی حاصل کی، مگر انہیں ڈبلیو بی سی فلائی ویٹ کی ورلڈ رینکنگ میں پوزیشن برقرار رکھنے کے لئے امریکہ میں منعقد ہونے والے مقابلے میں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا ۔

ایشین ریسلنگ، قومی پلیئرز کو ویزوں کے لئے بھارت کا گرین سگنل

ایشین جونیئر ریسلنگ چیمپئن شپ میں شرکت کے لئے بھارتی وزارت داخلہ نے پاکستانی ٹیم کو بھارت آنے کی اجازت دیدی۔ایشین جونیئر ریسلنگ چیمپئن شپ کے ڈی جادیو اسٹیڈیم نیو دہلی میں17سے 22جولائی تک شیڈول ہے۔ پاکستان، عراق اور افغانستان کے ریسلرز کو ویزہ جاری نہ کرنے پر یونائیٹد ورلڈ ریسلنگ کی جانب سے ایونٹ منسوخ یا بھارتی رکنیت معطل کیے جانے کا خدشہ تھا جس پر انڈین ریسلنگ فیڈریشن نے وزارت داخلہ کے حکام سے پاکستانی ریسلرز کو ویزے جاری کرنے کی درخواست کی جسے قبول کرلیا گیا۔انڈین فیڈریشن کے اسسٹنٹ سیکرٹری ونود تومار نے کہا کہ وزارت داخلہ نے پاکستانی ٹیم کو بھارت میں مقابلوں کے لئے آنے کی مشروط اجازت دے دی ہے۔انڈین فیڈریشن کی جانب سے کرائم برانچ کو اس بات کی یقین دہانی کرائی گئی ہے کہ پاکستانی ریسلرز ہوٹل اور اسٹیڈیم کے علاوہ کہیں نہیں جائیں گے، پاکستانی ریسلرز کو این او سی جاری ہونا خوش آئند ہے، ایشین کیڈٹ چیمپئن شپ2015ء میں ویزے مسائل کی وجہ سے ایونٹ بدمزگی کا شکار ہوا تھا، ہم کھیل کے فروغ کے لئے ایونٹس کے بہترین ماحول میں انعقاد پر یقین رکھتے ہیں، غیرملکی ریسلرز کی شرکت سے میزبان پلیئرز کو بھی سیکھنے اور کھیل میں بہتری لانے کا موقع ملتا ہے، مقابلوں کی رونقیں جتنی زیادہ ہوں گی، اتنا ہی زیادہ ہمارے ریسلرز سیکھ سکیں گے۔ انھوں نے کہا کہ افغانستان اور عراق کی جانب سے ایونٹ میں شرکت کے لئے کسی ریسلر کی انٹری نہیں کروائی گئی۔

پا کستا نی کر زکٹر فخر ز مان نے ایک اور اعزاز اپنے نا م کر لیا

زمبابوے میں کھیلی گئی ٹی ٹوئنٹی ٹرائی نیشن سیریز میں پاکستان کے فخر زمان نے نیا اعزاز حاصل کرتے ہوئے ویرات کوہلی اور افغانستان کے محمد شہزاد کے بعد کلینڈر ایئر میں500سے زائد رنز بنانے والے دنیا کے تیسرے بلے باز بن گئے ہیں۔زمبابوے میں کھیلی گئی ٹی ٹوئنٹی سیریز میں بھی فخرزمان کا کا بلا رنز اگلتا رہا،آسٹریلیا کے خلاف فائنل میں دھواں دھار 91رنز نے پاکستان کی جیت میں اہم کردار ادا کیا۔فخر زمان نے عمر اکمل کے2010ء میں431رنز کاقومی ریکارڈ بھی اپنے نام کرلیا۔اور کلینڈر ایئر میں سب سے زیادہ رنز بنانے والے پاکستانی بیٹسمین ہونے کا اعزاز حاصل کیا۔لیفٹ ہینڈر بیٹسمین نے500رنز کا ہدف کو بھی پیچھے چھوڑ دیا۔وہ ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل کلینڈرایئر میں500سے زائدرنزبنانے والے دنیاکے تیسرے بیٹسمین بن گئے،اس سے قبل بھارت کے ویرات کوہلی اور افغانستان کے محمد شہزاد کلینڈر ایئر میں 500رنز بنانے کا اعزاز رکھتے ہیں۔فخر زمان نے اس شاندارکارکردگی کی بدولت ٹی ٹوئنٹی بیٹسمین رینکنگ میں چوالیس درجہ کی جمپ لگائی اورکیریئر کی بہترین رینکنگ پوزیشن حاصل کرلی۔فخرزمان ،ایرون فنچ کے بعد دوسرے بہترین بیٹسمین بن گئے۔

ایشین گیمز کی تیاری کے سلسلہ میں قومی

آرچری ٹیم کے کھلاڑیوں کا تربیتی کیمپ شروع

پاکستان آرچری فیڈریشن کے زیراہتمام ایشین گیمز کی تیاری کے سلسلہ میں قومی آرچری ٹیم کے کھلاڑیوں کا تربیتی کیمپ آج سے پشاور میں شروع ہوگا۔ پاکستان آرچری فیڈریشن کے سیکرٹری جنرل وصال محمد خان نے بتایاکہ قومی ٹیم چھ کھلاڑیوں پر مشتمل ہو گی، جن میں تین مرد اور تین خواتین کھلاڑی شامل ہیں، مرد کھلاڑیوں میں پاکستان آرمی کے محمد طیب، ادریس مجید اور محمد ندیم جبکہ خواتین کھلاڑیوں پاکستان واپڈا کی اقصی نواز، پاکستان آرمی کی امہ زہرہ اور نبیلہ کوثر شامل ہیں۔ تربیتی کیمپ میں کوچنگ کے فرائض اجلال الدین اور سرفراز انجام دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ایشین گیمز آرچری کا ایونٹ 22 سے 28 اگست تک انڈونیشیا میں کھیلا جائے گا، جس میں 26 ممالک کی ٹیمیں حصہ لیں گی۔ قومی ٹیم کے کھلاڑی 19 اگست کو جکارتہ روانہ ہوگی اور ایونٹ میں شرکت کے بعد قومی ٹیم کے کھلاڑی 29 اگست کو واپس وطن پہنچیں گے۔*

مزید : ایڈیشن 1