شہباز شریف سینئر لیگی قیادت ، کارکنوں پر دہشتگردی ، اقدام قتل کے مقدمات

شہباز شریف سینئر لیگی قیادت ، کارکنوں پر دہشتگردی ، اقدام قتل کے مقدمات

لاہور،گجرات ،سرگودھا،فیصل آباد(کرائم رپورٹر ،خبر نگار،مانیٹرنگ ڈیسک،نیوزایجنسیاں ) مسلم لیگ (ن) کے صدر شہبازشریف اورحمزہ شہباز سمیت دیگر لیگی رہنماؤں پر دہشت گردی ،اقدام قتل سمیت دیگردفعات کے تحت مقدمات درج کرلیے گئے۔سابق وزیراعظم نوازشریف اور مریم نواز کی وطن واپسی کے موقع پر مسلم لیگ (ن) کے صدر شہبازشریف اور پارٹی کے دیگر رہنماؤں نے لاہور سمیت مختلف شہروں میں ریلیاں نکالیں۔ذرائع کے مطابق پولیس نے مسلم لیگ (ن) کے صدر شہبازشریف سمیت دیگر رہنماؤں کے خلاف مختلف تھانوں میں مقدمات درج کرلیے ہیں۔لوہاری گیٹ پولیس اسٹیشن میں ایس ایچ او کی مدعیت میں شہباز شریف،، حمزہ شہباز،، جاوید ہاشمی،، عظمی بخاری، سائرہ افضل تارڑ، مریم اورنگزیب،، کامران مائیکل، کرنل (ر)مبشر، راجہ ظفرالحق اور مشاہد حسین سید سمیت درجنوں (ن)لیگی رہنما ؤ ں اور کارکنوں کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا ہے، مقدمے میں انسداد دہشت گردی ایکٹ کی دفعہ 7، اقدام قتل اور دیگر سنگین جرائم کی دفعات شامل کی گئی ہے۔تھانہ نواب ٹاؤ ن میں اقدام قتل،، دہشت گردی، توڑ پھوڑ اور دیگر سنگین دفعات کے تحت درج کئے گئے مقدمے میں سیف الملوک کھوکھر، ملک شفیع کھوکھر، ملک افضل کھوکھر، ملک عرفان کھوکھراور شہباز ڈوگر کے علاوہ 500 نامعلوم افراد کو نامزد کیا گیا ہے۔ شمالی کینٹ تھانے میں سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی،، شہباز شریف کے پولیٹیکل سیکرٹری طلحہ برکی اور سابق وزیر صحت خواجہ سلمان رفیق کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا ہے۔گجرات میں مسلم لیگ (ن)کے رہنما ؤ ں اور کارکنوں کے خلاف 4 مختلف تھانوں میں مقدمات درج کئے گئے ہیں، ان مقدمات میں 96 ملزمان نامزد جب کہ 655 افراد نامعلوم ظاہر کئے گئے ہیں۔ ان مقدمات میں دفعہ 144 کی خلاف ورزی، اقدام قتل،، فائرنگ،، پولیس اہلکاروں کی وردی پھاڑنے اور کار سرکار میں مداخلت سمیت متعدد دفعات شامل کی گئی ہیں۔ پولیس نے ان مقدمات میں کئی لیگی رہنما ؤں کو بھی حراست میں لے لیا ہے، جن میں سابق مشیر وزیراعلی پنجاب نوابزادہ طاہر، سابق ارکان قومی و صوبائی اسمبلی عابد رضا، مبشرحسین، نوابزادہ حیدر مہدی، شبیر کوٹلہ اور معین نواز شامل ہیں۔سرگودھا میں بلا اجازت ریلی نکالنے اور ہوائی فائرنگ کرنے کے الزام میں 22 (ن)لیگی کارکنان کو گرفتار کرکے ان کے خلاف مقدمہ درج کرلیاگیا ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ گرفتار ملزمان کے خلاف بلا اجازت ریلیاں نکالنے اور قانون کی خلاف ورزی کرنے پر سخت کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔نواز شریف اور مریم نواز کے استقبال کیلئے فیصل آباد سے مسلم لیگ (ن) کے قومی وصوبائی امیدواران کی رانا ثناء اللہ خان ،رانا افضل خان ،چوہدری عابد شیر علی میاں فاروق ،ملک نواز ، رانا علی عباس سمیت دیگرسینکڑوں کارکنوں کیخلاف ریلیاں نکالنے پر پولیس نے مقدمات درج کرلئے۔آن لائن کے مطابق فیصل آباد پولیس نے ضلع بھر میں پر تشدد ہنگامے ‘ مظاہرے کرنے پر 1200لیگی امید واروں اور سر کر دہ رہنماؤں کے خلاف 899 مقدمات درج کر لئے‘ سول لائن‘ کو توالی‘ گلبرگ‘ رضا آباد‘ پیپلز کالونی‘سر گودھا روڈ‘ منصور آباد‘ چک جھمرہ ‘ نشاط آباد ‘ ساہیانوالہ‘ بٹالہ کالونی‘ سمن آباد ‘ فیکٹری ایریا‘ صدر فیصل آباد‘ جڑانوالہ‘ سمندری‘ تاندلیانوالہ ‘ ماموں کانجن ‘ ٹھیکری والا کے تھانوں میں درج ہونے والے مقدمات میں سابق وزیر قانون رانا ثناء اللہ خاں‘ سابق اراکین اسمبلی میاں عبد المنان‘ شیخ اعجاز احمد‘ سابق وزیر خلیل طاہر سندھو‘ فقیر حسین ڈوگر‘ رانا افضل خاں‘ مہر حامد رشید‘ نواز ملک‘ اسرار احمد منے خاں‘ رانا علی عباس خاں‘ میاں اجمل آصف وغیرہ کے نام شامل ہیں ۔

مقدمات درج

مزید : صفحہ اول