پی ٹی آئی کا ٹکٹ شیر اکبر خان کو دینا بڑی غلطی ہے ،آصف فصیح وردگ

پی ٹی آئی کا ٹکٹ شیر اکبر خان کو دینا بڑی غلطی ہے ،آصف فصیح وردگ

بونیر(ڈسٹرکٹ رپورٹر)پاکستان تحریک انصاف کے ٹکٹ کے امیدوار برائے این اے 9 وردگ قبیلہ سے تعلق رکھنے والے آ صف فصیح الدین وردگ نے پی ٹی ائی کے پارلیمانی بورڈ پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہاہے کہ جماعت اسلامی سے مستعفی ہوکر پاکستان تحریک انصاف میں الیکشن سے ایک ماہ قبل شمولیت اختیار کرنے والے شیراکبر خان کو این اے 9 کا ٹکٹ دینا اور نظریاتی کارکن میاں معین الدین باچا کو نظر انداز کرنا بہت بڑی غلطی ہے ۔معین باچا نے 2013 کے الیکشن میں 24 ہزار ووٹ لیکر صرف دوہزار ووٹ سے الیکشن ہارا تھا ۔مگر اس ٹکٹ نہ دیکر پی ٹی ائی کے پارلیمانی بورڈ نے بونیر کے این اے کاسیٹ اپنے ہاتھوں سے دے دیاہے ۔بونیر پریس کلب میں اپنے ساتھیوں ریٹائیر ڈ ڈی ایس پی سید زمین شاہ ،الہی بخش کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہاکہ میں نے دوسال قبل بونیر میں رہائش اختیار کی تھی اور یہاں کے عوام کی بے لوث خدمت کرکے ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ میں مفت کیسز لڑے ۔میری پارٹی پاکستان تحریک ااستقلال پاکستان تحریک انصا ف میں ضم ہو نے کے بعد میں نے این اے 9 بونیر سے پارٹی ٹکٹ کے لئے درخواست دی تھی ۔مگر جب پارٹی نے مجھے ٹکٹ نہ دیا ۔تو میں نے آزاد حیثیت میں الیکشن لڑنے کی بجائے کاعذات واپس لئے اور پارٹی کے فیصلہ کو قبول کیا ۔انہوں نے کہا کہ دوسال کے دوران بونیر کے عوام نے مجھے جو عزت دی ہے ۔میں بہ حیثٰت قانون دان اور سماجی کارکن کی حیثت سے بونیری عوام کی خدمت کرتارہوں گا۔ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ میں بونیری عوام کے کیسز مفت لڑوں گا ۔فصیح الدین وردگ نے کہا کہ پی ٹی ائی این اے 9 کے امیدوار کسی بھی پارٹی میں کارکن نہیں رہا ۔بلکہ انہوں نے ٹکٹ کے لئے پارٹیاں تبدیل کی ۔انہوں نے پی ٹی ائی کے ڈویژنل صدر محمود خان کے بارے میں کہاکہ انہوں نے جو الفاظ میرے متعلق استعمال کی ہے وہ کسی بھی سیاسی لیڈر کے شایاں شان نہیں ہے ۔میں اب پاکستان تحریک انصاف کا حصہ ہوں اور پارٹی پالیسیوں پر عمل کروں گا ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر