کوہاٹ میں پر امن انتخابات کو یقینی بنانے کیلئے پولیس کا تربیتی عمل شروع

کوہاٹ میں پر امن انتخابات کو یقینی بنانے کیلئے پولیس کا تربیتی عمل شروع

کوہاٹ (بیورورپورٹ)کوہاٹ میں عام انتخابات کے پرامن اور شفاف انعقاد کیلئے سیکیورٹی وانتظامی امور سے متعلق خصوصی تربیتی عمل کا آغاز کردیا گیا ہے۔الیکشن کمیشن کے جاری کردہ ضابطہ اخلاق کی پاسداری اور فول پروف حفاظتی انتظامات یقینی بنانے کے حوالے سے منعقدہ تربیتی پروگرام میں انتظامی محکموں کے اہلکاروں کو غیر جانبداری اور ایمانداری سے خدمات انجام دینے کے بارے میں خصوصی ہدایات جاری کردئیے گئے ہیں۔ملک بھر کی طرح کوہاٹ میں بھی عام انتخابات کے پرامن،شفاف،آزادانہ اور غیرجانبدارانہ انعقاد کو یقینی بنانے کے سلسلے میں نگران صوبائی حکومت کی طرف سے جاری احکامات اور ان احکامات کو عملی جامہ پہنانے کی خاطر ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر کوہاٹ سہیل خالد کی واضح ہدایات کی روشنی میں پولیس لائن کوہاٹ میں خصوصی تربیتی عمل کا آغاز کردیا گیا ہے ۔الیکشن ضابطہ اخلاق اور سیکیورٹی معاملات کے سلسلے میں ضلعی پولیس کے زیر اہتمام جاری اس تربیتی پروگرام میں انتخابی عمل کے دوران خدمات انجام دینے والے محکمہ تعلیم و صحت،فارسٹ ڈویژن،وائلڈ لائف،محکمہ فشریز،ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن،کسٹ سیکیورٹی ڈیپارٹمنٹ،ڈسٹرکٹ لیویز،خاصہ دار فورس،سول ڈیفنس ،پی کیو آر کے قومی رضاکاروں اور دیگر انتظامی محکموں کے اہلکاروں نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ تربیتی پروگرام کے دوران شرکاء کو الیکشن ضابطہ اخلاق اور سیکیورٹی عوامل کے بارے میں تفصیلی لیکچرز دیتے ہوئے بھر پور آگاہی دی گئی اور جامہ تلاشی کی عملی مشقوں سے روشناس کراتے ہوئے انہیں کسی بھی ناخوشگوار صورتحال سے نمٹنے کیلئے حفاظتی تدابیر اور فوری رسپانس دینے کے حوالے سے مؤثر معلومات فراہم کی گئی۔تربیتی پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے ڈی ایس پی ہیڈ کوارٹر صنوبر خان ،ایس ایچ او تھانہ کے ڈی اے سب انسپکٹر حمید خان اور لائن آفیسر سید سریر الدین نے شرکاء پر زور دیا کہ وہ زات اور برادری کی تمام تر وابستگیوں سے بالا تر ہوکر پرامن،شفاف،آزادانہ اور غیر جانبدارانہ انتخابی عمل کو یقینی بنانے میں اپنا بھر پور کردار ادا کریں۔انہیں ہدایت کی گئی کہ دوران ڈیوٹی موبائل فون کے استعمال سے اجتناب کیا جائے،پولنگ سٹیشن کے قریب مشکوک سامان یا مشتبہ شخص اور گاڑی کو کھڑا نہ رہنے دیا جائے،پولنگ کے عمل کے دوران ضعیف العمر،معذور اور بیمار افراد پر خصوصی توجہ دی جائے تاہم کسی بھی شخص کیساتھ ووٹ ڈالنے میں مدد نہ کی جائے تاکہ کسی انتخابی امیدوار کی جانبداری کا الزام نہ لگ جائے،انہیں یہ بھی ہدایت کی گئی کہ پولنگ سٹیشن میں داخل ہونیوالے افراد کی مکمل تلاشی لی جائے اور کسی بھی غیر متعلقہ شخص کو پولنگ سٹیشن کے اندر جانے کی قطعی اجازت نہ دی جائے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر