سراج رئیسانی کی شہادت پر شہبازشریف کا پیغام لیکن شہید کا نام ہی غلط لکھ دیا

سراج رئیسانی کی شہادت پر شہبازشریف کا پیغام لیکن شہید کا نام ہی غلط لکھ دیا
سراج رئیسانی کی شہادت پر شہبازشریف کا پیغام لیکن شہید کا نام ہی غلط لکھ دیا

  

کوئٹہ ، لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق وزیراعلیٰ بلوچستان نواب اسلم رئیسانی کے چھوٹے بھائی اور صوبائی اسمبلی سے امیدوار نوابزادہ سراج خان رئیسانی بلوچ گزشتہ دنوں مستونگ میں ایک کارنر میٹنگ کے دوران خودکش حملے میں اپنے 100سے زائد ساتھیوں سمیت شہید ہوگئے، کئی سیاسی وعسکری رہنماءمتاثرہ خاندان سے اظہاریکجہتی کیلئے مستونگ کے سواران ہاﺅس پہنچے جبکہ مسلم لیگ ن کے صدر شہبازشریف نے بھی ایک دن کیلئے ا نتخابی سرگرمیاں معطل کرتے ہوئے متاثرین کیساتھ اظہار یکجہتی کیلئےکوئٹہ پہنچ گئے ہیں ، اس سے پہلے انہوں نے ایک  پیغام بھی جاری کیا لیکن شہید سراج رئیسانی کے نام کی بجائے سراج درانی لکھ دیا۔

ٹوئٹرپر جاری اپنے بیان میں شہبازشریف نے لکھا کہ ’ میں لاہور میں نوازشریف کی استقبالیہ ریلی کے سلسلے میں مصروف تھا ، مستونگ میں ایک کارنر میٹنگ کے دوران خودکش حملے میں 100سے زائد افراد کی شہادت کا سن کر دل ٹوٹ گیا، میرے پاس اس نقصان کو بیان کرنے کے لیے الفاظ نہیں‘۔

شہبازشریف نے دوسری ٹوئیٹ میں لکھاکہ ’ غمزدہ خاندان اور بالخصوص سابق وزیراعلیٰ بلوچستان اسلم رئیسانی سے ان کے بھائی سراج درانی (سراج رئیسانی اصلی نام تھا) کی شہادت پر تعزیت کرتاہوں، اللہ آپ سب کا حامی وناصر ہو‘۔

شہبازشریف کی یہ ٹوئیٹ سامنے آنے پرسوشل میڈیا صارفین نے فوری طورپر غلطی پکڑلی اور فرمان اللہ اچکزئی نے لکھا کہ ’سر، درانی نہیں، یہ رئیسانی ہیں، مہربانی کرکے درست کریں‘۔

ضرور پڑھیں: بے ادب بے مراد

ناصر جوگیزئی نے لکھا کہ ’مہربانی کرکے اصلاح کریں، یہ درانی نہیں ، وہ رئیسانی قبائل سے اور بلوچستان ، پاکستان کا ہمارا فخر تھا، وہ واقعی ایک بہادر پاکستانی تھا‘۔

اویس بلوچ نے لکھا کہ ’میاں صاحب،وہ سراج درانی نہیں رئیسانی تھے‘۔

کئی صارفین کی طرف سے نشاندہی کیے جانے کے باوجود اس خبر کے فائل ہونے تک شہبازشریف کے ٹوئیٹ میں لفظ درانی اور ٹوئیٹ بھی موجود ہے ۔ 

مزید : قومی