فیس بک نے اللہ اکبر تحریک اور ملی مسلم لیگ سے منسلک متعدد فیس اکاﺅنٹس غیر فعال کر دیئے

فیس بک نے اللہ اکبر تحریک اور ملی مسلم لیگ سے منسلک متعدد فیس اکاﺅنٹس غیر ...
فیس بک نے اللہ اکبر تحریک اور ملی مسلم لیگ سے منسلک متعدد فیس اکاﺅنٹس غیر فعال کر دیئے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن ) فیس بک نے غیر رجسٹرڈ سیاسی جماعت ملی مسلم لیگ (ایم ایم ایل) اور اس کی حمایت کرنے والی رجسٹر سیاسی جماعت اللہ اکبر تحریک سے منسلک متعدد فیس بک اکاونٹس غیر فعال کردیے ہیں ۔

نجی ٹی وی ڈان نیوز کے مطابق فیس بک کی جانب سے پاکستان میں انتخابات میں مثبت رجحان برقرار رکھنے کے لیے ملی مسلم لیگ کے متعدد فیس بک اکاونٹس کو غیر فعال کیا گیا۔ملی مسلم لیگ کے سوشل میڈیا انچارج طحٰہ منیب نے بتایا کہ ایم ایم ایل، اللہ اکبر تحریک کے پلیٹ فارم سے لڑنے والے 260 امیدواروں کی حمایت کر رہی ہے اور ہمارے ایک ہزار سے زائد کارکنان سوشل میڈیا پر انتخابی مہم چلانے میں مصروف تھے لیکن 4 سے 5 دن میں فیس نے بغیر کسی وجہ کے ہمارے امیدواروں، حمایت یافتہ افراد، کارکنوں کے اکاونٹس بند اور غیر فعال کردیے۔

واضح رہے کہ وزارت داخلہ کی تجویز پر الیکشن کمیشن نے ملی مسلم لیگ کوالیکشن میں حصہ لینے کے لیے رجسٹر نہیں کیا تھا ۔رجسٹریشن نہ ہونے کی وجہ سے ملی مسلم لیگ انتخابات میں حصہ نہیں لے رہی تھی، جس کے باعث ایم ایم ایل کے حمایت یافتہ امیدوار اللہ اکبر تحریک کے پلیٹ فارم سے عام انتخابات میں حصہ لے رہے ہیں۔

ایم ایم ایل کے سوشل میڈیا انچارج کا مزید کہنا تھا کہ ہمارے کارکنوں کی جانب سے متعدد مرتبہ اکاونٹس دوبارہ بنانے کی کوشش کی گئی لیکن انہیں بھی فیس بک کی جانب سے غیر فعال کردیا گیا۔انہوں نے بتایا کہ ’ہم نے فیس بک کی ای مارکیٹنگ کے ذریعے ہزاروں روپے انتخابی مہم میں خرچ کیے لیکن اس کے باوجود بغیر کسی اطلاع کے ہمارے اکاونٹس بند کردیے گئے۔ انہوں نے اس خدشے کا بھی اظہار کیا کہ ہوسکتا ہے ہمارے یہ اکاونٹس بھارت کے کہنے پر بند اور غیر فعال کیے گئے ہوں کیونکہ فیس بک پر بھارت کا اثر و رسوخ ہے۔

مزید : قومی