انڈیا میں بچوں کو چاکلیٹ تقسیم کر تے مسلم نو جوان کو لوگوں نے قتل کر دیا لیکن کیوں؟۔۔۔۔۔ آپ بھی جانیے

انڈیا میں بچوں کو چاکلیٹ تقسیم کر تے مسلم نو جوان کو لوگوں نے قتل کر دیا لیکن ...
انڈیا میں بچوں کو چاکلیٹ تقسیم کر تے مسلم نو جوان کو لوگوں نے قتل کر دیا لیکن کیوں؟۔۔۔۔۔ آپ بھی جانیے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

نئی دہلی(ڈیلی پاکستان آن لائن) انڈیا میں بچوں کو چاکلیٹ تقسیم کر تے مسلم نو جوان کو مقامی لو گوں نے بچہ چور سمجھا کر قتل کرڈالا جبکہ دیگر دو افراد شدید زخمی ہو گئے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق حیدرآبادکا رہائشی محمد اعظم اپنے دوستوں طلحہ اسماعیل اورمحمد سلمان کے ہمراہ ہانڈیکیرا گاوں میں ایک دوست کے گھر جارہاتھا۔ جب وہ گاوں پہنچے تو انہوں نے اپنی کار روک کر چاکلیٹ خریدی اور بچوں کو دینے لگے۔ اس دوران وہاں کچھ مقامی لوگ جمع ہوگئے اور ان نوجوانوں کے اس قدم کی مخالفت کی۔ اتنا ہی نہیں ان کا ویڈیو بناکر واٹس اپ پر وائرل کردیا کہ وہ تینوں بچہ چور ہیں اور چاکلیٹ دے کر بچوں کو بہلانے کی کوشش کررہے ہیں،جب نوجوان گاوں سے واپس لوٹ رہے تھے تبھی انہیں مرکی تھانے کے پاس روک لیا گیا۔ مقامی لوگوں نے ان کے ساتھ مارپیٹ شروع کردی۔ اس حادثہ کی اطلاع پاکر فوراً پولیس موقع پر پہنچی اور بڑی مشکل سے تینوں کو بھیڑ سے بچایا۔ پولیس نے تینوں کو فوراً ہسپتال پہنچایا، لیکن اعظم کی ہسپتال میں موت ہوگئی۔ وہیں اس کے دو دیگر دوستوں کا فی الحال علاج چل رہا ہے۔

مزید : بین الاقوامی