سکول مالکان کا فیسیں کم کرنے سے انکار، جرمانوں کے نوٹس بھی بھجوادیے

سکول مالکان کا فیسیں کم کرنے سے انکار، جرمانوں کے نوٹس بھی بھجوادیے

  

لاہور(ڈویلپمنٹ سیل) وزیر تعلیم مراد راس کی طرف سے سکول کھلنے کی تاریخ تک پنجاب بھر کے تعلیمی اداروں کی فیسوں میں 20فیصد کٹوتی جاری رکھنے کے اعلان پر عمل درآمد کا نوٹیفکیشن جاری نہ ہو سکا، والدین کی خوشیاں ادھوری، اس سے پہلے لاہور ہائی کورٹ کے احکامات کی روشنی میں پنجاب حکومت نے جون2020ء تک کی فیسوں میں 20 فیصد کٹوتی کا نوٹیفکیشن جاری کیاتھا۔ 3دن پہلے والدین کے بڑھتے ہوئے دباؤ اور تعلیمی ادارے 14ستمبر تک بند رکھنے کے فیصلے کے بعد پنجاب کے وزیرتعلیم مراد راس نے 14ستمبر تک کی فیسوں میں 20فیصد کٹوتی جاری رکھنے کی نوید سنائی تھی جس سے پنجاب بھر کے والدین بڑے خوش تھے دلچسپ امر یہ ہے کہ وزیر تعلیم کے واضح اعلان کے باوجود ابھی تک 20فیصد تک رعایت کا نوٹفیکشن جاری نہیں ہو سکا اور تعلیمی ادارے جولائی، اگست کی فیسوں میں 20 فیصد کمی کرنے کے لیے تیار نہیں۔ والدین نے وزیر اعلیٰ سے نوٹس لینے اور 20فیصد کٹوتی کے فیصلے پر عمل درآمد کا مطالبہ کیاہے۔دوسری طرف لاک ڈاؤن کی وجہ جون 2020ء تک کی فیسیں جمع نہ کروانے والوں پر سکولوں نے جرمانے عائد کرنا شروع کر دیئے ہیں، والدین جو پہلے تعلیم ادارے بندہونے اور کاروبار نہ ہونے کی وجہ سے پریشان ہیں ان کے لئے فیسیوں کے ساتھ بھاری جرمانے آزمائش بن کر رہ گئے ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -