وزیر توانائی سندھ امتیاز احمد شیخ کی زیر صدارت اجلاس

  وزیر توانائی سندھ امتیاز احمد شیخ کی زیر صدارت اجلاس

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)وزیر توانائی سندھ امتیاز احمد شیخ کی زیر صدارت محکمہ توانائی کے دفتر میں منعقدہ آج ایک اجلاس میں سندھ میں توانائی کے منصوبوں میں اراضی کے حوالے سے مسائل کے حل اور منظوری کے احکامات دیئے گئے۔اجلاس میں کمشنر حیدآباد سمیت سندھ کے مختلف اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز نے آن لائن شرکت کی۔ان کے علاؤہ ممبر لینڈ یوٹیلائزیشن اعجاز بلوچ،محکمہ توانائی سندھ کے افسران،کے الیکٹرک اور دیگر متعلقہ اداروں کے افسران نے بھی شرکت کی۔اجلاس میں کے الیکٹرک کو ہاکس بے میں 500 کلو واٹ کے کے گرڈ اسٹیشن کی تعمیر کے لئے 40 ایکڑ زمین الاٹ کرنے کے احکامات دیئے گئے۔ اس موقع پر وزیر توانائی سندھ امتیاز احمد شیخ نے کہا کہ سندھ حکومت کراچی کو بجلی کی فراہمی کے لیے متعلقہ اداروں کی ہر ممکن مدد کررہی ہے۔ انہوں نے گرڈ اسٹیشن کی تعمیر کے لئے اراضی الاٹمنٹ کے احکامات دیتے ہوئے کے الیکٹرک کے افسران کو ہدایت کی کہ وہ اپنے منصوبے پر جلد از جلد کام شروع کریں۔اجلاس میں صوبے کے مختلف اضلاع میں سوئی سدرن گیس کمپنی کی پائپ لائن بچھانے کے مختلف منصوبوں میں اراضی کے مسائل کے حل کی بھی منظوری دی گئی۔ وزیر توانائی امتیاز احمد شیخ نے اجلاس میں موجود افسران کو ہدایات دیں کہ وہ توانائی کے منصوبوں میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے اور منصوبوں کی تیز تر تکمیل کے لئے بروقت اقدامات کریں۔اجلاس میں تھر کول پراجیکٹ میں بجلی بنانے کے منصوبوں کو فاسٹ ٹریک پر لانے کے لئے ڈپٹی کمشنر تھر پارکر اور ڈپٹی کمشنر عمر کوٹ کو ضروری احکامات دیئے گئے۔اجلاس میں گھارو اور جھمپیر میں ہوا سے بجلی بنانے کے منصوبوں اور جامشورو میں کوئلے کے استعمال کے منصوبوں کی افادیت مقامی آبادیوں تک پہنچانے کے لئے کارپوریٹ سوشل رسپانسیلیبیٹی CSR کے اصول و قوانین پر عملدرآمد کے بھی احکامات دیئے گئے اور تھر فاؤنڈیشن کی طرز پر کینجھر فاؤنڈیشن بنانے کے لئے کام کو تیز کرنے کی ہدایات دی گئیں۔

مزید :

صفحہ آخر -