حکومت کی کارکردگی تضادات اور یوٹرن کا مجموعہ ہے،سکندر شیر پاؤ

حکومت کی کارکردگی تضادات اور یوٹرن کا مجموعہ ہے،سکندر شیر پاؤ

  

شبقدر(تحصیل رپورٹر) قومی وطن پارٹی کے صوبائی چیئرمین سکندر حیات خان شیرپاؤ نے پی ٹی آئی حکومت کی تقریباً7 سوروزہ کارکردگی کوتضادات اور ہر معاملے پر یو ٹرن لینے کا مجموعہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ عوام سے کئے گئے وعد ے پورے نہیں کئے گئے۔ان خیالات کا اظہار انھوں نے تحصیل شبقدر شاہ جی کورونہ میں شمولیتی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر حلقہ PK-60شبقدر کے سابقہ امیدوار راجداللہ خان نے اپنے ساتھیوں اور خاندانوں سمیت قومی وطن پارٹی میں شمولیت کا اعلان کیا۔سکندر شیرپاؤ نے پارٹی میں شامل ہونے والے سیاسی شخصیات کو خوش آمدید کہتے ہوئے کہا کہ لوگ موجودہ حکمرانوں سے مایوس ہو چکے ہیں اور ان کی نظریں قومی وطن پارٹی پر لگی ہوئی ہیں۔اس موقع پرسابقہ ایم پی اے اور ضلعی چیئرمین بابر علی مہمند، ضلعی جنرل سیکریٹری مفتی افتخار، ملتان، اقرار خان، قیصرجمال، امجد مہمند، یحیی جان مہمند بھی موجود تھے۔ سکندر حیات خان شیرپاؤ نے کہا کہ حکومت عالمی مالیاتی اداروں سے بے تحاشا قرضے لینے کے باوجود ملک کی معیشت کو سہارا نہ دے سکی جبکہ ملکی قرضوں میں اضافے کا ریکارڈ ضرور قائم کیا۔انھوں نے کہا کہ پی ٹی آئی نے اپنے وعدوں کو پورا کرنے کی بجائے عوام کی پریشانیوں میں اضافہ کیا اور ملک و قوم کو بحران در بحران کا سامناہے۔انھوں نے کہا کہ چینی،آٹا اور تیل مافیا نے حکمرانوں کی نااہلی سے فائدہ اٹھایا۔انھوں نے کہا کہ پائلٹوں کے جعلی لائسنسوں کے معاملے نے بھی ملک کو عالمی سطح پر نقصان پہنچایا۔ انھوں نے کہا کہ حکومت کوویڈ-19پر قابو پانیکی بجائے غیر ضروری معامالات میں الجھ رہی ہے جس کی وجہ سے وبائی مرض کے پھیلاؤ میں اضافہ ہو رہا ہے۔انھوں نے کہا کہ حکومت صوبوں سے صوبائی خود مختاری چھیننے کیلئے 18ویں آئینی ترمیم میں ردوبدل کرنا چاہتی ہے جس کی کسی صورت اجازت نہیں دی جائے گی۔انھوں نے کہا کہ وفاقی حکومت این ایف سی ایوارڈ میں صوبوں کا حصہ کم کرنے کی سازش کرکے وفاق کو نقصان پہنچانے پر تلی ہوئی ہے۔انھوں نے کہا کہ صوبائی حقوق پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا اور اس قسم کے سازشوں کو ناکام بنانے کیلئے بھرپور جدوجہد کی جائے گی۔انھوں نے کہا کہ بڑھتے ہوئے افراط زر کی وجہ سے لوگوں کی قوت خرید ختم ہو چکی ہے۔انھوں نے کہا کہ ملک میں ریاست مدینہ کے قیام کے دعویداروں نے ہر معاملے پر یوٹرن لیااور ان کی تبدلی کا نعرہ دھوکہ ثابت ہوا۔انھوں نے کہا کہ تحریک انصاف گزشتہ سات سالوں سے خیبر پختونخوا میں برسراقتدار ہے لیکن وہ اپنے نام نہاد تبدلی کے نعرہ کو حقیقت میں تبدیل نہ کرسکی۔انھوں نے کہا کہ ضم شدہ اضلاع کی ترقی کیلئے ان کے ساتھ کئے گئے مالی وعدے بھی پورے نہیں کئے گئے۔ انھوں نے علاقہ میں جاری بجلی کے لوڈشیڈنگ پر تشویش کا اظہار کیااور کہا کہ پی ٹی آئی نے شبقدر کے مسائل اور مشکلات کو پس پشت ڈال دیا ہے۔انھوں نے مزید کہا کہ علاقہ میں تاحال کوئی ترقیاتی منصوبہ شروع نہیں کیا گیا اور نہ ہی یہاں کے باسیوں کی بہبود کیلئے کوئی قدم اٹھایا گیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -