اسلامیہ کالج کی سالانہ فیس میں اضافہ پر حکومت سے جواب طلب

اسلامیہ کالج کی سالانہ فیس میں اضافہ پر حکومت سے جواب طلب

  

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاور ہائیکورٹ نے اسلامیہ کالج کی سالانہ فیس میں اضافہ کے خلاف دائر رٹ پر ہائیر ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ اور صوبائی حکومت کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کرلیا کیس کی سماعت پشاور ہائیکورٹ کے جسٹس اکرام اللہ خان اور جسٹس اعجاز انور پر مشتمل دو رکنی بینچ نے کی درخواست گزار کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ یونیورسٹی نے طالب علموں سے فیس نہ بڑھانے کا معاہدہ کیا تھا یونیورسٹی نے معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے فیس میں اضافہ کیاہے فیسوں میں اضافے کے خلاف طلبا احتجاج کو ختم کرنے کے لئے یونیورسٹی انتظامیہ نے تین سال تک فیس نہ بڑھانے کا معاہدہ کیا تھا اس موقع پر عدالت میں موجود ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل نے عدالت کو بتایا کہ معاہدہ ایجنڈے میں شامل ہے لیکن ایکٹنگ وائس چانسلر کے پاس اختیارات نہیں ہیں مستقل وی سی تعینات ہوتا تو معاہدے پر عمل درآمد شروع ہو جائے گا جس پر جسٹس اکرام اللہ نے کہا کہ قانون کے مطابق چھ ماہ کے اندر نیا وی سی تعینات کیوں نہیں کیا گیا عدالت نے نے ہائیر ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ اور صوبائی حکومت کو نوٹس جاری کرتے ہوئے آئندہ سماعت پر جواب طلب کرلیا

مزید :

پشاورصفحہ آخر -