کرکٹ میں نسلی تعصب، جنوبی افریقہ کے 30 سیاہ فام کھلاڑی میدان میں آ گئے

کرکٹ میں نسلی تعصب، جنوبی افریقہ کے 30 سیاہ فام کھلاڑی میدان میں آ گئے
کرکٹ میں نسلی تعصب، جنوبی افریقہ کے 30 سیاہ فام کھلاڑی میدان میں آ گئے

  

جوہانسبرگ (ڈیلی پاکستان آن لائن) جنوبی افریقی کرکٹ میں نسلی تفریق ایک بار پھر کھل کرسامنے آ گئی ہے اور سیاہ فام پروٹیز کرکٹرز نے اس حوالے سے ایک مرتبہ پھر اپنی آواز بلند کر دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق 30 سابق سیاہ فام پروٹیز کرکٹرز نے اپنے مشترکہ اعلامیہ میں الزام عائد کیا کہ کھیل میں بدستور نسلی تعصب موجود ہے، ان پلیئرز میں مکھایا این تینی، ورنون فلینڈر، ہرشل گبز، ایشول پرنس، پال ایڈمز اور پال ڈومنی بھی شامل ہیں جبکہ 5 کوچز نے بھی اس اعلامیے کی تائید کر دی ہے۔

یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ جنوبی افریقہ کرکٹ ٹیم کے اہم نوجوان فاسٹ باﺅلر کاگیسو ربادا اور لونگی نگیڈی جیسے موجودہ سیاہ فام پلیئرز اس اعلامیہ میں شامل نہیں ہیں، اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ بورڈ موجودہ موقع سے فائدہ اٹھا کر کھیل سے رنگت کی بنیاد پر تفریق ختم کرے، ہم اپنے سفید فام ساتھی کرکٹرزسے بھی کہتے ہیں کہ وہ بھی اس مہم کو سپورٹ کریں۔

مزید :

کھیل -