پولیس نے تشدد اور فائرنگ کر کے غنڈہ گردی کی انتہا کر دی، جمال دین

پولیس نے تشدد اور فائرنگ کر کے غنڈہ گردی کی انتہا کر دی، جمال دین

شرقپورشریف(نامہ نگار)ناظر لبانہ کے رہائشی محکمہ ایجوکیشن کے اہلکار جمال دین نے صحافیوں کو بتایا کہ مڑھ بھنگواں پولیس چوکی کے اہلکاروں نے دوپہر ایک بجے کے قریب میرے گھر میں داخل ہوکر چادر اور چار دیواری کا تقدس پامال کیا اور وجہ پوچھنے پر میری ضعیف العمر والدہ کے منہ پر تھپڑ رسید کیے اور ہوائی فائرنگ کی اور دیگر خواتین کو بھی تشدد کا نشانہ بنایا جس پر ہم احتجاج کررہے تھے جو کہ ہمارا حق ہے اور اس پر پولیس نے غنڈہ گردی کی ہے اور یہ پولیس کی ظلم اور زیادتی کی انتہا ہے ہمیں انصاف دیا جائے جس وقت جمال دین صحافیوں سے گفتگو کر رہا تھا کہ پولیس کے لاٹھی بردار اہلکاروں نے ہوائی فائرنگ کرتے ہوئے دیہاتیوں پر تشدد شروع کردیا اور جمال دین اور اس کے بھائی اور دیگر رشتہ داروں اور خواتین کو گرفتار کرلیا اس بارے میں مڑھ بھنگواں پولیس چوکی کے انچارج سب انسپکٹر اشرف گورایا نے صحافیوں کو بتایا کہ تربوز چوری کے ملزم کی نشان دہی پر ہم دیگر ملزمان کو گرفتار کرنے کے لیے آئے توان لوگوں نے پولیس اہلکاروں کے ساتھ بدتمیزی کی پولیس نے کسی خاتوں پر تشدد نہ کیا ان کا احتجاج بلاجواز ہے اور چوری کے ملزمان کو بچانے کی کوشش کی جارہی ہے

مزید : علاقائی