پیرا میڈیکل سٹاف ایسوسی ایشن کی اپیل پر آج صوبائی دارالحکومت کے ہسپتالوں میں ہڑتال ہوگی

پیرا میڈیکل سٹاف ایسوسی ایشن کی اپیل پر آج صوبائی دارالحکومت کے ہسپتالوں ...

لاہور(جاوید اقبال) پیرامیڈیکل سٹاف ایسوسی ایشن کی اپیل پر آج صوبائی دارلحکومت کے تمام سرکاری ٹیچنگ اور ضلعی ہسپتالوں میں مکمل ہڑتال ہوگی۔اور سینکڑوں پیرا میڈیکل سٹاف جیل روڈ پر دھرنا دیں گے۔اس حوالے سے ایسوسی ایشن کے صدر یوسف بلا نے اعلان کر دیا ہے کہ سروس سٹرکچر کا نوٹیفیکشن جاری ہونے تک جیل روڈ پر دھرنا دیا جائے گا اور ٹریفک بند کر دی جائے گی۔اس دوران پیرامیڈکل سٹاف،لیبارٹریوں کا تمام ایکسرے،سی ٹی سکین کے تمام شعبہ جات بھی بند کر دیے جائیں گے اور ہسپتالوں کا نظام جام کر دیں گے۔ادھر مشیر صحت خواجہ سلمان رفیق کا کہنا ہے کہ کسی کو زبر دستی ہڑتال کر انے کی اجازت نہیں دیں گے۔اگر کسی نے زبر دستی ملازمین کو کام سے روکا تو قانون حرکت میں آئے گا۔اورقانون شکنی کرنے والوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا۔جس پر ایسوسی ایشن کے رہنماؤں کا کہنا ہے کہ ہڑتال بھی ہوگی،ہسپتال جام بھی کریں گے،کسی کو فرائض بھی سرانجام نہیں دینے دیں گے اور دھرنا بھی ہوگااور سروس سٹرکچر کے نوٹیفیکشن تک تمام مطالبات پورے کرا کر ہی ڈیوٹی پر واپس جائیں گے۔بتا یا گیا ہے کہ پیرا میڈیکل سٹاف ایسوسی ایشن نے اپنے مطالبات پورے نہ ہونے کے خلاف آج تمام ہسپتالوں میں ہڑتال کی تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں اور اس کیلئے صوبائی تنظیم نے تمام ہسپتالوں کی تنظیموں کو ہدایات جاری کی ہیں کہ وہ ہسپتالوں میں حاضری لگا کر ہڑتال کرائیں اور اس کیلئے ہر ہسپتال کیلئے الگ سے کمیٹیاں تشکیل دے دی گئی ہیں۔ڈنڈا بردار دستے بھی تشکیل دیے گئے ہیں جو ہڑتال میں شامل نہ ہونے والوں کے خلاف کاروائی کریں گے۔اس حوالے سے صوبائی صدر یوسف بلا،صوبائی چئیر مین جاوید چوہان،صوبائی میڈیا کو آرڈینیٹرارشد بٹ نے کہا کہ چار سال قبل وزیر اعلیٰ پنجاب نے وعدہ کیا تھا کہ وہ پیرامیڈیکل سٹاف کا سروس سٹرکچر جاری کرائیں گے۔اس کیلئے سو مرتبہ ہڑتالیں کیں،ہر مرتبہ وعدے ہوئے جو آج تک وفا نہیں ہو سکے۔اس لیے آج سے مجبوراً تمام ہسپتالوں میں کام بند کر دیں گے دھرنا مطالبات کا باقاعدہ نوٹیفیکشن جاری ہونے تک جاری رہے گا۔اس حوالے سے مشیر صحت خواجہ سلمان رفیق نے کہا کہ پیرامیڈیکل سٹاف کے نوے فی صد مطالبات پورے ہو چکے ہیں۔کسی نے قانون ہاتھ میں لینے کی کوشش کی تو قانون اپنا راستہ خود بنائیگا۔

پیرامیڈیکل

مزید : صفحہ آخر