پنجاب سالانہ ایک کھرب روپے سودقرضوں پر ادا کر رہا ہے،پرویز الہٰی

پنجاب سالانہ ایک کھرب روپے سودقرضوں پر ادا کر رہا ہے،پرویز الہٰی

لاہور(جنرل رپورٹر)پاکستان مسلم لیگ کے مرکزی رہنما اور سابق وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویزالٰہی نے کہا ہے کہ پنجاب کے 8ویں بجٹ سے بھی غریب اور ان کے بچے تعلیم، دوائی، نوکری سے محروم رہیں گے۔ وہ پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری چودھری ظہیرالدین، میاں عمران مسعود، عامر سلطان چیمہ اور دیگر پارٹی رہنماؤں کے ہمراہ اپنی رہائش گاہ پر پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ صوبہ کی معاشی حالت، لوڈشیڈنگ، بیروزگاری اور مہنگائی کے خاتمہ کے دعویدار شہبازشریف کی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت یہ ہے کہ ریسکیو 1122 کو ریسکیو کرنے کیلئے بھی عوام سے چندہ مانگ رہے ہیں، 1122، ٹریفک وارڈن سمیت ہمارے دور کے تمام شاندار منصوبوں کو برباد کیا جا رہا ہے، کسان پر نئے ٹیکس لگا کر ظلم کیا گیا ہے، ان کیلئے کوئی سبسڈی نہیں،تمام رہائشی منصوبے اور آشیانہ سکیم بھی ناکام رہی ہیں، صوبہ میں 10نئے ٹیکس لگائے گئے ہیں، لوڈشیڈنگ، مہنگائی، غربت، بیروزگاری بہت بڑھ گئی ہے، عوام، کسان، محنت کش، ملازمین سب ان کی جان کو رو رہے ہیں، صنعتکار پریشان ہیں، سرکاری سکول لاوارث نظر آتے ہیں، سرکاری ہسپتالوں میں مفت دوائیاں نہیں ملتیں۔ انہوں نے بجٹ کا تفصیلی تجزیہ اور حکومتی ناکامیوں کا تفصیلی ذکر کرتے ہوئے کہا کہ 2014-15ء میں ریونیو ہدف 95ارب تھا لیکن صرف 46ارب وصول کیے گئے، اب ریونیو ہدف پچھلے سال سے 72ارب روپے کم کر دیا گیا ہے۔، پچھلے سال ترقیاتی بجٹ صرف 50%استعمال کیا گیا وہ بھی پسماندہ اضلاع کے فنڈز لاہور میں لگا دئیے گئے، ہمارے دور میں ریکارڈ 93% بجٹ استعمال ہوتا تھا جو اب تک ریکارڈ ہے۔

مزید : صفحہ اول