ماڈل ایان علی کی کتاب کے 70 صفحات مکمل، نام ’’اسیر صیاد‘‘ تجویز

ماڈل ایان علی کی کتاب کے 70 صفحات مکمل، نام ’’اسیر صیاد‘‘ تجویز
ماڈل ایان علی کی کتاب کے 70 صفحات مکمل، نام ’’اسیر صیاد‘‘ تجویز

  

راولپنڈی(آن لائن) خوبرو ماڈل ایان علی نے اڈیالہ جیل میں اپنی کتاب کے 70 صفحات مکمل کرلئے اور کتاب کا نام ’’اسیر صیاد‘‘ تجویز کیا گیا ہے جبکہ اڈیالہ جیل سے عدالت لانے والی پولیس وین کو اپنی زندگی کی اہم گاڑی قرار دیتے ہوئے ایان علی نے حکومت سے پولیس وین کی خریداری کی خواہش کا اظہار کیا ہے۔

آن لائن کو ایان علی جیل میں اپنی زندگی پر لکھی جانے والی کتاب کے صفحات حاصل ہوئے ہیں جس میں ماڈل ایان علی نے اپنی جیل کی زندگی، عدالتوں میں پیشی، جیلر، خواتین قیدیوں، حوالاتیوں، پولیس اہلکار کے رویے، کپڑوں کی خریداری، میک اپ کرانے سمیت تمام معاملات پر تفصیلات درج کی ہیں۔

کتاب کی ابتداء میں اہم ترین تصنیف کا عنوان بھی منتخب کرنے کی کوشش کی گئی ہے جس میں 5 مختلف نام دئیے گئے ہیں مگر ’’اسیر صیاد‘‘ کے نام پر سرخ مارکر سے ہائی الرٹ بھی کیا گیا ہے۔ ذرائع نے آن لائن کو مزید بتایا کہ لکھی جانے والی کتاب کے تاحال 70 صفحات مکمل کرلئے گئے ہیں کتاب کے صفحہ نمبر 19 پر اس خواہش کا بھی اظہار کیا گیا ہے کہ خوبرو ماڈل جب پولیس وین میں عدالتوں میں آتی جاتی ہیں وہ پولیس وین ذاتی طور پر خریدنے اور اسے ایک یادگار کے طور پر گھر کے اندر رکھنیک ی خواہش کا اظہار بھی کیا گیا ہے۔

خوبرو ماڈل چاہتی ہیں کہ حکومت یہ گاڑی ان کو قیمتاً فروخت کردئیے اور وہ اسے تاریخی حیثیت دے کر اس میں اپنی زندگی کے اہم تریندن جیل میں گزارنے بارے دیگر اشیاء بھی اس گاڑی میں رکھ سکیں۔ ذرائع نے آن لائن کو بتایا کہ پولیس وینک ی خریداری کی خواہش کا نہ صرف اظہار کیا گیا ہے بلکہ اس گاڑی کی دو تصاویر بھی کتاب کے صفحہ نمبر 20 اور 21 پر دی گئی ہیں جس میں ایک بار ماڈل ایان علی کو گاڑی سے اترتے اور ایک جگہ گاڑی میں چڑھتے دکھایا گیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ماڈل ایان علی کی لکھی جانے والی کتاب کے بعض صفحات تکمیل کے بعد سلوشن ٹیپ کے ذریعے وقتی طور پر ایک دوسرے سے جوڑ دئیے گئے ہیں۔ ذرائع کے مطابق کتاب میں 19 پولیس حکام، جیل کی بعض معروف شخصیات اور جیل سے باہر کی زندگی بارے بھی دو ابواب شامل کئے گئے ہیں۔ کتاب کے 21 ابواب رکھے گئے ہیں جس میں تاحال 4 ابواب مکمل ہوئے ہیں۔

مزید : راولپنڈی