روزگار کی تلاش میں عرب ممالک جانے والے پاکستانیوں کیلئے سفارتخانے نے اہم ترین ہدایات جاری کردیں

روزگار کی تلاش میں عرب ممالک جانے والے پاکستانیوں کیلئے سفارتخانے نے اہم ...
روزگار کی تلاش میں عرب ممالک جانے والے پاکستانیوں کیلئے سفارتخانے نے اہم ترین ہدایات جاری کردیں

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

دبئی سٹی (مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ عرب امارات میں ملازمت کے خواہش مند پاکستانیوں کو دھوکہ باز ایجنٹوں کی وجہ سے نہ صرف لاکھوں کا نقصان برداشت کرنا پڑتا ہے بلکہ وہ قانونی مشکلات میں بھی پھنس جاتے ہیں۔ پاکستانی شہریوں کو فراڈ ایجنٹوں سے بچانے کے لئے دبئی میں پاکستانی قونصلیٹ کہ کمیونٹی ویلفیئر اینڈ لیبر اتاشی ہارون ملک کی طرف سے رہنما اصولوں پر مبنی گائیڈ جاری کی گئی ہے تاکہ وہ یقینی بناسکیں کہ انہیں قانونی ملازمت دی جارہی ہے اور ان کا مستقبل محفوظ ہوگا۔ نوجوانوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ ملازمت کے حصول کے وقت مندرجہ ذیل اہم ترین باتوں کو یقینی بنائیں۔

مزیدپڑھیں:سعودی عرب میں رمضان المبارک کے استقبال کی تیاریاں شروع

-1 ملازمت فراہم کرنے والے ادارے اور پاکستان اوورسیز امپلائمنٹ پروموٹرز ایسوسی ایشن کے درمیان معاہدہ ہونا ضروری ہے۔

-2 دونوں ادارے پاکستان سے ملازمین کی بھرتی کے لئے شرائط و ضوابط طے کرچکے ہوں۔

-3 معاہدے کی دستاویزات پاکستان میں لیبر اتاشی کے دفتر سے تصدیق ہونا ضروری ہیں۔

-4 دبئی قونصلیٹ کے اہلکار ملازمت فراہم کرنے والے ادارے کا دورہ کرکے ملازمین کے لئے کام اور رہائش کے حالات کا جائزہ لیں گے۔

-5 مکمل جائزے کے بعد ملازمت کے اشتہارات شائع کئے جائیں گے اور امیدواران کو انٹرویو کے لئے بلایا جائے گا۔

-6 انٹرویو میں کامیاب ہونے والے امیدواروں کو ملازمت کا کنٹریکٹ دیا جائے گا۔

-7 کامیاب امیدواران کے لئے ضروری ہے کہ کنٹریکٹ کی شرائط کو بغور پڑھیں اور سمجھیں اور یہ جان لیں کہ تنخواہ اور دیگر سہولیات تحریری معاہدے کے مطابق دی جائیں گی، جبکہ زبانی بتائی گئی باتوں کی کوئی قانونی اہمیت نہیں ہوگی۔

 

مزید : بین الاقوامی