کمسن بیٹیوں کو ذبح کرنے کے مجرم کی پھانسی روکنے کی استدعا مسترد ،16جون کو تختہ دار پر لٹکایا جائے گا

کمسن بیٹیوں کو ذبح کرنے کے مجرم کی پھانسی روکنے کی استدعا مسترد ،16جون کو تختہ ...
کمسن بیٹیوں کو ذبح کرنے کے مجرم کی پھانسی روکنے کی استدعا مسترد ،16جون کو تختہ دار پر لٹکایا جائے گا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور (نامہ نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے کمسن بیٹیوں کے قاتل مختارکے ڈیتھ وارنٹ معطل کرنے کی درخواست مسترد کر دی ، مجرم کو آج 16جون کو تختہ دار پر لٹکایا جائے گا، مسٹر جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی اور مسٹر جسٹس شہباز علی رضوی نے مجرم کے بھائی محمد اشرف کی درخواست پر سماعت شروع کی تو درخواست گزار کے وکیل چودھری ریاض محمود کمبوہ نے موقف اختیار کیا کہ جولائی 2004ءمیں لٹن روڈ پولیس نے مجرم مختار کی بیوی چندا بی بی کی درخواست پر دو کمسن بیٹیوں اڑھائی سالہ حرا اور ساڑھے چار سالہ صوبیہ جبیں کو استرے سے ذبح کرنے کے الزام میں قتل کا مقدمہ درج کر کے چالان ٹرائل کورٹ میں پیش کیا جس پر ٹرائل کورٹ نے جنوری 2007ءمیں مجرم مختار کو دو مرتبہ سزائے موت کا حکم سنایا ، انہوں نے مزید موقف اختیار کیا کہ مدعی مقدمہ کے ساتھ راضی نامہ ہو رہا ہے ،راضی نامہ کے فیصلے تک مجرم مختار کے ڈیتھ وارنٹ معطل کیا جائے ، فاضل بنچ نے غیر موثر راضی نامہ پیش کرنے کی بنیاد پر ڈیتھ وارنٹ معطل کرنے کی درخواست مسترد کر دی، مجرم کو آج 16جون کوٹ لکھپت جیل میں پھانسی دی جائے گی۔

مزید : لاہور