جس عدلیہ کی بحالی اور عزت بڑھانے کی جدوجہد کی اسی نے وزیر اعظم کو سسلی مافیا جیسے الفاظ سے نوازا، جے آئی ٹی مزید وقت حاصل کرنا چاہتی ہے:طلال چوہدری

جس عدلیہ کی بحالی اور عزت بڑھانے کی جدوجہد کی اسی نے وزیر اعظم کو سسلی مافیا ...
جس عدلیہ کی بحالی اور عزت بڑھانے کی جدوجہد کی اسی نے وزیر اعظم کو سسلی مافیا جیسے الفاظ سے نوازا، جے آئی ٹی مزید وقت حاصل کرنا چاہتی ہے:طلال چوہدری

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)مسلم لیگ ن کے رہنما اور ممبر قومی اسمبلی  طلال چوہدری نے کہا ہے کہ جے آئی ٹی  کے الزامات کی تحقیقات جاری ہے ثابت ہونے پر سزا دی جائے گی۔ جے آئی ٹی سپریم کورٹ سے تحقیقات کے لئے مزید وقت حاصل کرنا چاہتی ہے۔

نجی ٹی وی چینل ’’جیو نیوز‘‘ سے گفتگو کرتے ہوئے  طلال چوہدری نے کہا ہے کہ مسلم لیگ ن کا ماضی اس بات کی گواہی دے رہا ہے  کہ ہم نے عدلیہ کی بحالی اور عزت بڑھانے کے لئے عملی جدو جہد کی، مگر اسی عدلیہ کی جانب سے ملک کے وزیراعظم کو سسلی مافیا جیسے الفاظ سے نوازا گیا، ہم نے جے آئی کے دو ممبران پر پہلے روز ہی سے اپنے تحفظات کا اظہار کر دیا تھا اور سپریم کورٹ کو اپنے تحفظات سے آگاہ  بھی کیا تھا ، اس کے باوجود وزیراعظم کے بچے جے آئی ٹی میں پیش ہوتے رہے اور اب وزیراعظم بھی خود پیش ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ شریف خاندان  کے فلیٹس کا معاملہ 40سال سے چل رہا ہے ، وزیراعظم سے3نسلوں کا حساب لیا جا رہا ہے، انشاء اللہ وزیراعظم اپنے کیس کا اچھے طریقے سے دفاع کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ جے آئی ٹی سپریم کورٹ سے تحقیقات کے لئے مزید وقت حاصل کرنا چاہتی ہے، جے آئی ٹی نے جن جن اداروں پر الزامات لگائے ہیں اس کی تحقیقات کی جا رہی ہے، جے آئی ٹی ثبوت فراہم کرے جس ادارے پر الزامات ثابت ہوئے ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

مزید :

قومی -