پانامہ کیس تحقیقات، وزیر اعظم پاکستان آج جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوں گے

پانامہ کیس تحقیقات، وزیر اعظم پاکستان آج جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوں گے
پانامہ کیس تحقیقات، وزیر اعظم پاکستان آج جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوں گے

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) پانامہ کیس تحقیقات کے لئے قائم مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے طلب کرنے پر آج وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف آج جے آئی ٹی کے روبرو پیش ہوں گے۔ملکی سیاسی تاریخ میں پہلی بار وزیراعظم نوازشریف آج کسی تحقیقات کمیٹی کے سامنے پیش ہوں گے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم نوازشریف آج پہلی بار پاناما کیس کی جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم کے سامنے پیش ہوں گے جب کہ وزیراعظم کی آمد کے موقع پرروٹ سیل کردیا جائے گا اور پولیس کی بھاری نفری تعینات ہوگی۔جے آئی ٹی میں پیشی کے موقع پر پارٹی کارکنان کو جوڈیشل اکیڈمی اسلام آباد آنے سے منع کردیا جب کہ وزیراعظم کے معاون خصوصی آصف کرمانی کا کہنا ہے وزیراعظم نے کارکنوں سے کہا ہے کہ مجھے دعاو¿ں میں یاد رکھیں۔میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم نوازشریف جے آئی ٹی میں پیش ہونے کے موقع پر میڈیا سے گفتگو بھی کریں گے جس کے لیے جوڈیشل اکیڈمی کے باہر وزیراعظم کے لئے بلٹ پروف ڈائس لگا دیا گیا ہے۔

پاکستان نے انگلش ٹیم کو انگلینڈ کی سر زمین پر چاروں شانے چت کر دیا, قومی ٹیم فائنل میں پہنچ گئی ،ملک بھر میں جشن

واضح رہے کہ جے آئی ٹی کے سربراہ واجد ضیا نے 8 جون کو وزیر اعظم کو خط لکھ کر طلب کیا تھا جس میں انہیں بطور وزیراعظم اور رکن قومی اسمبلی مخاطب کرتے ہوئے کہا گیا کہ جے آئی ٹی کے ساتھ تعاون کریں اور تمام متعلقہ ریکارڈاور دستاویزات ساتھ لائیں۔جبکہ جے آئی ٹی نے وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کو بھی 17 جون کو بلا رکھا ہے جب کہ وزیراعظم کے داماد کیپٹن ریٹائرڈ صفدرکو بھی جے آئی ٹی نے طلب کرلیا۔ کیپٹن صفدر 24جون کو جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوں گے۔

واضح رہے وزیر اعظم نوازشریف سے پہلے ان کے دونوں بیٹے حسین نواز اور حسن نواز جے آئی ٹی میں متعدد بار پیش ہو چکے ہیں۔

مزید :

قومی -