گردہ سکینڈل ،ملزموں کی ضمانت کی درخواستیں خارج

گردہ سکینڈل ،ملزموں کی ضمانت کی درخواستیں خارج
گردہ سکینڈل ،ملزموں کی ضمانت کی درخواستیں خارج

  

لاہور(نامہ نگار)ضلع کچہری کے جوڈیشل مجسٹریٹ نے گردہ سکینڈل میں گرفتار ایجنٹوں اور گردے فروخت کرنے والے ملزموں کی ضمانت پر رہائی کی درخواستیں خارج کر دیں۔

ہائی کورٹ کے فیصلوں کی نقول کا طریقہ کار آسان کردیا گیا ،چیف جسٹس نے نئی کاپی برانچ کا سنگ بنیاد رکھ دیا

جوڈیشل مجسٹریٹ فاروق اعظم سوہل نے ملزم ایجنٹوں محمد اطہر، صفیہ بی بی ، گردے فروخت کرنے والے ملزموں ناہید اختر اور سید عامر کی ضمانت پر رہائی کی درخواستوں پر سماعت کی، ملزموں کے وکلاءنے موقف اختیار کیا کہ ملزموں کو گردہ سکینڈل کے مقدمہ میں بے بنیاد ملوث کیا گیا ہے ، وکلاءنے مزید موقف اختیارکیا کہ ملزم مقدمہ میں نامزد نہیں ہے بلکہ انہیں مرکزی ملزموں کی نشاندہی پر گرفتار کیا گیا ہے، ایف آئی اے کے پاس ملزموں کے خلاف کوئی ٹھوس شواہد موجود نہیں،ملزموں کو ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دیا جائے، پراسکیوشن کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ انسانی اعضاءکی تجارت ناقابل ضمانت جرم ہے ، سپریم کورٹ کے فیصلوں کی روشنی میں بھی ملزموں کا جرم معاشرے کے خلاف ہے ، پراسکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ ملزم اطہر اور صفیہ بی بی ڈاکٹر فواد کیلئے مریضوں اور گردہ ڈونرز کا بندوبست کرتے تھے ،ملزموں کی ضمانت پر رہائی کی درخواستیں خارج کی جائیں، عدالت نے فریقین کے دلائل سننے اور ریکارڈ دیکھنے کے بعد گردہ سکینڈل میں گرفتار ایجنٹوں اور گردے فروخت کرنے والے ملزموں کی ضمانت پر رہائی کی درخواستیں خارج کر دیں

مزید :

لاہور -