کپاس کی فی ایکڑ پیداوار بڑھانے کیلئے جڑی بوٹیوں کی تلفی یقینی بنائیں

کپاس کی فی ایکڑ پیداوار بڑھانے کیلئے جڑی بوٹیوں کی تلفی یقینی بنائیں

  

لاہور(کامرس رپورٹر )محکمہ زراعت پنجاب کے ترجمان نے کہا ہے کہ پاکستان کی کپاس کی اوسط پیداوار دوسرے ممالک کی نسبت کم ہے جس کی ایک بڑی وجہ فصل میں جڑی بوٹیوں کی بہتات ہے ، ایک تحقیق کے مطابق جڑی بوٹیا ں کپاس کی پیداوار کا تقریباً13سے 42 فیصد تک نقصان کر تی ہیں،کپاس کی فصل کی منافع بخش کاشت کو درپیش خطرات میں سب سے زیادہ خطرہ جڑی بوٹیوں سے ہے،جدید تحقیق کے مطابق کیڑے مکوڑے 30، بیماریاں 20،متفرق 5اور اکیلی جڑی بوٹیاں فصلوں کی فی ایکڑ پیداوار میں 45 فیصد تک کمی کا باعث بنتی ہیں، اس کے علاوہ پیداوار کا معیار بھی خراب کرتی ہیں جس سے منڈی میں کپاس کی قیمت کم ملتی ہے،جڑی بوٹیوں کی وجہ سے زرعی وسائل اور پانی کا ضیاع کے علاوہ غذائی اجزاء کا نقصان ہوتا ہے اور روشنی کے ضیاع کے علاوہ جڑی بوٹیاں جگہ پر بھی قبضہ کر لیتی ہیں جس سے پیداوار میں نمایاں کمی ہوتی ہے،کپاس کے کاشتکاروں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ جڑی بوٹیوں کی تلفی یقینی بنائیں تاکہ فی ایکڑ پیداوار میں اضافہ ممکن بنایا جا سکے۔

مزید :

کامرس -