ے آئی ٹی تحقیقات کی بجائے خود فریق بنتی جارہی ہے ،ہمارے خدشات بڑھ گئے ،تحقیقاتی کمیٹی کے تازہ اعتراضات سے لگتا ہے کہ حالات اچھے نہیں: خواجہ سعد رفیق

ے آئی ٹی تحقیقات کی بجائے خود فریق بنتی جارہی ہے ،ہمارے خدشات بڑھ گئے ...
ے آئی ٹی تحقیقات کی بجائے خود فریق بنتی جارہی ہے ،ہمارے خدشات بڑھ گئے ،تحقیقاتی کمیٹی کے تازہ اعتراضات سے لگتا ہے کہ حالات اچھے نہیں: خواجہ سعد رفیق

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ جے آئی ٹی کے جواب سے مطمئن نہیں خدشات بڑھ گئے ہیں، جے آئی ٹی تحقیقات کی بجائے خود فریق بنتی جارہی ہے، پانامہ میں ایک خاندان کو نشانہ بنایا گیا،مشترکہ تحقیقاتی کمیٹی کے تازہ اعتراضات سے لگتا ہے کہ حالات اچھے نہیں۔

نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ ہم نے جمہوریت کے لئے آمریت کے خلاف جنگ لڑی ہے ،وزیراعظم قانون کا احترام کرتے ہوئے جے آئی ٹی میں پیش ہوں گے ، پانامہ کی آڑ میں ایک خاندان کو ٹارگٹ کیا جارہا ہے ،خطرہ ہے کہ اس کی آڑ میں جمہوری نظام کو نقصان نہ ہوجائے۔ انہوں نے کہا کہ جے آئی ٹی کے بارے میں تحفظات بڑھ گئے ہیں، ہم جے آئی ٹی کے جواب سے مطمئن نہیں ہیں، کارکنوں کو جے آئی ٹی میں جانے سے روک دیا گیا ہے ،میں نہیں جانتا کہ گاڑی جوڈیشل اکیڈمی کے اندر جائے گی یا باہر رکے گی ؟۔انہوں نے کہاکہ مقدمے کے فیصلے سے قبل ریمارکس دیے جائیں تو خدشات بڑھتے ہیں ،کیا حکومتوں کی ساکھ نہیں ہوتی؟ پانامہ کیس کی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہے ،مقدمہ کا سیاسی مستقبل اور جمہوریت سے گہرا تعلق ہے ۔انہوں نے کہا کہ جے آئی ٹی کے تازہ اعتراضات سے لگتا ہے کہ حالات اچھے نہیں ہیں ،جے آئی ٹی کے دو ممبران سے جو بات شروع ہوئی تھی ،اب اعتراضات تمام اراکین تک پہنچ گئے ہیں۔

مزید :

قومی -