ہائیکورٹ کے حکم امتناعی کے باوجود ایئر پورٹس کی نجکاری شروع کر دی گئی

ہائیکورٹ کے حکم امتناعی کے باوجود ایئر پورٹس کی نجکاری شروع کر دی گئی

  

لاہور (سپیشل رپورٹر) لاہور ہائیکورٹ کے حکم امتناعی کے باوجود سول ایوی ایشن نے ائیر پورٹس کی نجکاری شروع کردی،سول ایوی ایشن انتظامیہ توہین عدالت کی مرتکب ہوگئی ۔تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ نے ائیر پورٹس کی نجکاری پر حکم امتناعی جاری کیا تھا مگر سول ایوی ایشن نے عدالتی حکم نظر انداز کرکے نجکاری شروع کردی۔ ائیرپورٹس کی نجکاری کی دستاویزات کے مطابق نجکاری کا مالی پرپوزل 16جون کو مکمل کیا جائے گا، کامیاب بولی پر کمپنی کے حق میں 20جون کو فیصلہ دیا جائے گا۔ کامیاب بولی لگانے والی کمپنی کو 23 جون تک تحریری نوٹیفکیشن جاری کر دیا جائے گا۔ دستاویزات پر سول ایوی ایشن کے چیف ایچ آر آفیسر سمیر سعید نے دستخط کئے۔ نجکاری کے حوالے سے سول ایوی ایشن کا شیڈول کھلم کھلا توہین عدالت کے زمرے میں آتا ہے۔ اس حوالے سے سول ایوی ایشن کے سینئر جائنٹ ڈائریکٹر پبلک ریلیشن پرویز جا رج کا کہنا ہے کہ اس با بت کچھ نہیں بتا یا جاسکتا۔

مزید :

علاقائی -