خیبرپختونخوا اسمبلی نے 603ارب کے 59مطالبات زر سمیت فنانس بل منظور کر لیا

خیبرپختونخوا اسمبلی نے 603ارب کے 59مطالبات زر سمیت فنانس بل منظور کر لیا

پشاور(این این آئی)خیبرپختونخوااسمبلی نے 59 مطالبات زر پرمشتمل603ارب روپے کی بجٹ کی منظوری دیدی۔ صوبائی اسمبلی نے فنا نس بل کوبھی منظورکرلیا جس کے تحت ٹیلروں پر لگائے جانیوالے نئے ٹیکس کوبھی ختم کردیاگیا، صوبائی اسمبلی اجلاس میں دو دنوں کے دوران مختلف مطالبات زر کو پیش کیاگیاجس کی ایوان نے متفقہ طورپرمنظور دی ،بجٹ مالی سال 2017-18میں327ارب روپے اخراجات جا ر یہ اور 208ارب روپے ترقیاتی کاموں کیلئے مختص کئے گئے ہیں بجٹ اجلاس کے دوران وزیراعلیٰ پرویزخٹک باقاعدگی کیساتھ شریک ہوئے اپوزیشن کے اراکین سرداربابک،جعفرشاہ ، لطف الرحمن ،ولی محمد،ثوبیہ خان، آمنہ سردار،فخراعظم وزیر،محمدعلی شاہ باچہ،رشادخان ،نگہت اور کز ئی ،محمدعلی ،صالح محمد اور بخت بیدار نے تجاویز دئیے، حکومت کی جانب سے صوبائی وزیراطلاعات شاہ فرمان نے اپوزیشن کی تجاویز کا خیر مقد م کیا، حکومت کی جانب سے درخواست کئے جانے کے بعد مختلف مطالبات زر پرتحاریک کٹوتی واپس لے لی گئیں ،ایوان نے مجموعی طور پر 59مطالبات زرکی منظوری دیدی جس کی مجموعی مالیت603ارب روپے بنتی ہے، بجٹ مالی سال2017-18پاس کئے جانے کے بعد فنانس بل کوبھی متفقہ طو رپر منظورکیاگیا ،تاہم فنانس بل میں ٹیلروں پر اضافی ٹیکس کو حذ ف کردیاگیا ایوان آج ضمنی بجٹ کی منظوری دے گا۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...