جمشید دستی کی گرفتاری حکومت کا ظالمانہ اور غیر منصفانہ اقدام ہے‘ میاں مقصود

جمشید دستی کی گرفتاری حکومت کا ظالمانہ اور غیر منصفانہ اقدام ہے‘ میاں مقصود

ملتان (سٹی رپورٹر) امیر جماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمدنے کہا ہے کہ جمشید دستی کی گرفتاری حکومت کا ظالمانہ اور غیر منصفانہ اقدام ہے جس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے ۔انہوں نے کہ نہری پانی توڑنے کے الزام میں گرفتاری ایک غیر منصفانہ اقدام ہے پنجاب میں کتنے جاگیر دار، (بقیہ نمبر39صفحہ12پر )

وڈیرے ہیں جو آئے روز نہری پانی توڑ کراپنی زمینوں کو سیراب کرتے ہیں اور غریب کسان پانی سے محروم رہتے ہیں اور اُن کی زمینیں خشک پڑی رہتی ہیں مگر ان کے خلاف کوئی کاروائی نہیں کی جاتی کیونکہ وہ طاقتور اور بااثر ہیں اور وارہ بندی بھی اپنی مرضی سے بنواتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ جمشید دستی نے تو کوئی جرم نہیں کیا انہوں نے اپنی زمینوں کو سیراب کرنے کیلئے نہیں پانی توڑا بلکہ غریب مظلوم کاشتکاروں کیلئے یہ قدم اُٹھایا اس کا جرم یہ ہے کہ وہ غریبوں کی آواز بن کر ظالم جاگیر داروں، وڈیروں کو للکارتا ہے۔میاں مقصود احمد نے مزید کہا کہ حکمران اپنی کرپشن، لوٹ مار سامنے آنے سے پریشان اور بوکھلاہٹ کا شکار ہیں اور اور وہ اپنے مخالفین کے خلاف انتقامی کاروائیوں پر اُتر آئے ہیں حکمرانوں کو یاد رکھنا چاہئے ان کا یوم حساب قریب ہے ۔ قانون سب کیلئے برابر ہونا چاہئے چاہے وہ غریب ہویا جاگیر دار، وڈیرہ ہو۔انہوں نے کہا کہ سپیکر قومی اسمبلی کے پروڈکشن آرڈر کے باوجود جمشید دستی کو رہا نہ کرنا سپیکر کی کرسی کی تو ہین ہے۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ جمشید دستی کو فوری طور پر رہا کیا جائے اور تمام مقدمات واپس لئے جائیں۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...