الفلاع سے لاپتہ نوجوان کے کیس کو سی ٹی ڈی نے حل کر لیا

الفلاع سے لاپتہ نوجوان کے کیس کو سی ٹی ڈی نے حل کر لیا

  

کراچی (کرائم رپورٹر)الفلاع سے دو سال قبل لاپتہ ہونے والے نوجوان کے کیس کو سی ٹی ڈی نے حل کر لیا ،،مسنگ پرسن کیس کی تکنیکی بنیاد پر کی گئی تفتیش میں انکشاف ہوا کہ واردات میں دوست ہی ملوث ہیں ، دوسری جانب سی ٹی ڈی نے شیڈول فوتھ میں شامل افراد کا ریکارڈ کمپیوٹرائزڈ کرنا شروع کر دیا ہے۔یہ بات ایس ایس پی سی ٹی ڈی عمر شاہد حامد اور انچارج سی ٹی ڈی راجہ عمر خطاب نے بدھ کو ڈی آئی جی سی ٹی ڈی کے آفس میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بتائی ۔ایس ایس پی عمرشاہد حامد نے بتایا کہ گزشتہ دنوں سی ٹی ڈی سندھ کی مختلف ٹیموں نے کارروائی کرتے ہوئے 39مفرور اور اشتہاری ملزما ن کو گرفتار کرلیا ہے ۔مذکورہ ملزمان کراچی کے علاوہ اندرون کے مختلف اضلاع کے تھانوں کو مختلف مقدمات میں مطلوب تھے ۔انہوں نے کہا کہ شیڈول فورتھ میں شامل افراد کا ریکارڈ کمپیوٹرائزڈ کیا جارہا ہے ۔ اب تک صوبے بھر سے 590 سے 435 افراد کا ریکارڈ اپ ڈیٹ کر لیا گیا ہے ۔کراچی : شیدول فورتھ میں شامل 37 افراد جیل میں اور 18 غیر حاضر ہیں ۔کراچی : شیدول فورتھ میں شامل 23 افراد لا پتہ ہیں جن کی تلاش میں چھاپے مارے جا رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ڈسٹرکٹ پولیس ،اسپیشل برانچ اور سی ٹی ڈی نے مشترکہ طور پر فیصلہ کرتے ہوئے مزید 166افرا د کو فورتھ شیڈول میں شامل کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔جبکہ لسٹ میں موجود 20افراد کو رہا کردیا جائے گا ۔انہوں نے کہا کہ ریڈ بک کا آٹھواں ایڈشن اگلے ماہ جاری کیا جائے گا جس میں 70انتہائی مطلوب خطرناک دہشت گردوں کے نام اور کوائف درج ہیں ۔پریس کانفرنس میں راجہ عمر خطاب نے بتایا کہ 15نومبر 2015سے مسنگ پرسن کی فہرست میں شامل نوجوان کے کیس کو بھی حل کر لیا گیا، ابتدا میں شبہ تھا کہ کسی قانون نافذ کرنے والے ادارے نے الفلاح سے بلال کو تحویل میں لیا ہے لیکن کئی ماہ بعد تفتیش سی ٹی ڈی کو ملنے پر تکنیکی بناد پر تحقیق کی تو انکشاف ہوا کہ اسے دوستوں نے ہی تاوان کی غرض سے اغوا کے بعد قتل کر کے لاش ٹھکانے لگادی تھی ، واردات میں ملوث نعمان,دانش سمیت تین ملزمان کو گرفتار کیا گیا ۔جبکہ بھائی بہن دبئی فرار ہوگئے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ملزمان کا سراغ موبائل فون کی مدد سے لگایا گیا۔ ملزمان نے بلال کو تاوان کی غرض سے اغوا کے بعد قتل کیا اور لاش کو جلادیاگیا۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -