انسان کی پہلی غذا اور سنّت رمضان

انسان کی پہلی غذا اور سنّت رمضان
انسان کی پہلی غذا اور سنّت رمضان

  


یہ کتنی ذلت شرمندگی اور بے شرمی کی بات ہے کہ ماہ رمضان میں بھی ناقص دودھ بیچنے والے گلچھڑے اڑا رہے ہیں۔اللہ ہی انہیں ہدایت دے سکتا ہے ۔یہ قوم اتنی بگڑ چکی ہے کہ جان بوجھ کر ملاوٹ کرتی اور اللہ کے عذاب کو دعوت دیتی ہے۔دودھ ہر انسان کے لئے اہم ترین غذا ہے۔یہ انسان کی سب سے پہلی اورمکمل غذا ہے جس میں متوازن غذا کے تمام اجزاء لحمیات، چکنائی، پانی، شکر اور نمکیات پائے جاتے ہیں۔ یہ ہر عمر کے افردا کے لیے ایک جیسی مفید ہے۔ دودھ میں کیلشیم کی مقدار تمام غذاؤں سے زیادہ ہوتی ہے۔ جو کہ جسم کی نشو و نما کے لیے بہت ضروری ہے۔

دودھ کے تمام اجزاء ماسوائے چکنائی کے پانی میں حل ہو جاتے ہیں۔ ہمارے ہاں عام طور پر بھینس اور گائے کا دودھ استعمال ہوتا ہے جبکہ عرب ممالک میں اونٹنی اور بکری کا دودھ استعمال ہوتا ہے۔ ہمارے جسم کو صحت برقرار رکھنے کے لیے جس غذا کی ضرورت ہوتی ہے، اس میں لحمیات، نشاستہ، حیاتین اور معدنیات شامل ہیں۔ دودھ میں متذکرہ بالا تمام اجزاء ہوتے ہیں۔ دودھ سیال ہونے کے سبب جلد ہضم ہو کر جسم میں جزو بدن بنتا ہے۔ تاریخ اور مطالعہ سے معلوم ہوتا ہے کہ جن علاقوں میں دودھ یا اس سے بنی اشیاء استعمال ہوتی ہیں، وہ ہمیشہ صحت مند، توانا اور لمبی عمر پاتے ہیں۔ دودھ کے فوائد حاصل کرنے کے لیے ضروری ہے کہ خالص ہو۔ ہمارے آخری پیغمبر رسول اکرم ؐ دودھ کو بہت پسند فرماتے۔

حضرت ام الفضلؓ سے روایت ہے کہ ایک روز لوگوں کو خیال آیا کہ آپ ؐ روزے سے ہیں۔ میں نے ایک برتن کے اندر دودھ بھیجا۔ تو آپﷺ نے نوش فرمایا۔ حضرت ابوبکر صدیقؓ فرماتے ہیں کہ ہجرت کے وقت میں آپ ؐ کے ساتھ تھا۔ اگلے روز دوپہر میں آپ ؐ سو گئے۔ تو میں نے راہ گیر چرواہے کی بکری سے اپنے برتن میں کچھ دودھ لیا۔ پھر جب آپ ؐ بیدار ہوئے تو میں نے ٹھنڈا کرنے کی غرض سے تھوڑا پانی ملا دیا۔ اور عرض کیا کہ یا نبی اللہ ! آپﷺ اسے نوش فرمالیں۔ آپ ؐ نے نوش فرمایا اور فرمایا کہ میں خوش ہوگیا۔

اگر رمضان المبارک میں سحری و افطاری کی مبارک ساعتوں میں دودھ اور کھجور کا استعمال ہو تو یہ نہ صرف سنت نبوی ؐ ہے بلکہ جسمانی صحت بہتر رہے گی۔ بازاری مشروبات کی بجائے کھجور اور دودھ کا شربت گھر پر تیار کرکے پینا بہت مفید ہے۔ افطار کے لیے دودھ آدھا کلو میں تین کھجوریں صاف کرکے گھٹلی نکال کر ڈال لیں اور آدھ کلو پانی ملا لیں ۔ہلکی آنچ پر پکنے دیں۔ جب پک کر اس کی مقدار آدھا گلاس رہ جائے تو اتار کر سبز الائچی ایک عدد کے دانے کوٹ کر شامل کریں اور حسب ضرورت و ذائقہ چینی ملا لیں۔ شربت تیار ہے۔ رمضان المبارک میں ہر عمر کے لوگوں کے لیے مفید ہے۔ اگر رمضان المبارک میں صحت مند توانا اور ہشاش بشاش رکھے گا۔

.

نوٹ: روزنامہ پاکستان میں شائع ہونے والے بلاگز لکھاری کا ذاتی نقطہ نظر ہیں۔ادارے کا متفق ہونا ضروری نہیں۔

مزید : بلاگ


loading...