اتنی سی کہانی

اتنی سی کہانی
اتنی سی کہانی

  

شکر

اس دن جل کھڈ کے قریب مارٹن کی گاڑی خراب ہوگئی۔

امیر کبیر مارٹن نے مدد کے لئے کچے گھر کا دروازہ بجایا۔

نوجوان نے گرمجوشی سے استقبال کیا۔

گھر میں یوں بلایا جیسے کسی محل میں بلا رہا ہو۔

گھر غربت کا نمونہ تھا۔

بس چھت ، دیوار اور زمین۔

ضرور پڑھیں: بے ادب بے مراد

چٹائی پر تھوڑا سا فروٹ، چاول اور چند پکوڑوں کی افطاری۔

وہ کبھی کچھ مارٹن کے آگے رکھتا کبھی کچھ۔

غریب ہوتے ہوئے بھی وہ کتنا سخی تھا۔

’’تم روزے آخر کیوں رکھتے ہو۔‘‘

مارٹن نے پوچھا توغربت کا مارا یہ شخص مسکرایا اور بولا۔

’’تاکہ میں غریبوں کو یاد رکھوں‘‘

مزید : رائے /کالم